پی ایس ایل اب مضبوط برانڈ بن چکا ہے،مشتاق احمد

پی ایس ایل اب مضبوط برانڈ بن چکا ہے،مشتاق احمد

  

لاہور(سپورٹس رپورٹر )نیشنل کرکٹ اکیڈمی کے ہیڈ کوچ مشتاق احمد نے کہا ہے کہ پاکستان اور ویسٹ انڈیز کے مابین یکم اپریل سے کراچی میں شروع ہونے والی ٹی‘ ٹونٹی سیریز میں پاکستان ٹیم کا پلڑا بھاری ہوگا ، ٹیم کی پرفارمنس دیکھتے ہوئے کہا جاسکتا ہے کہ قومی ٹیم ہی فاتح ہوگی۔انہوں نے کہاکہ قومی ٹی‘ ٹونٹی ٹیم بیلنس اورویسٹ انڈیز سے بہتر ہے جبکہ اسے ہوم گراؤنڈ اور کراؤڈ کا بھی ایڈوانٹج حاصل ہوگا ۔مشتاق احمد نے کہاکہ ہیڈ کوچ مکی آرتھر اور کپتان سرفراز احمد کے بیانات سے انداز ہوا ہے کہ وہ پی ایس یل میں پرفارمنس دکھانے والے نوجوان کرکٹرز کو ویسٹ انڈیز کے خلاف سیریز میں موقع دیں گے جس سے ان کو تجربہ جبکہ قومی ٹیم کو نیا ٹیلنٹ ملے گا ۔مشتاق احمد نے بتایا کہ پی ایس ایل اب مضبوط برانڈ بن چکا ہے ،اس لئے اب صرف انہی غیر ملکی کرکٹرز کو ڈرافٹ میں شامل کیا جانا چاہئے جو پاکستان آکر کھیلنے کے معاہدے پر دستخط کریں۔

غیر ملکی کھلاڑیوں کو کنٹریکٹ سے زیادہ پیسے دینے کی اب ضرورت نہیں ۔ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ جو فرنچائز غیر ملکی کھلاڑیوں کو ان کے کنٹریکٹ سے زیادہ پیسے دیتی ہیں ان کے کھلاڑی پاکستان میں کھیلنے پر رضا مند ہوجاتے ہیں جو صحیح رجحان نہیں ،غیر ملکی کھلاڑیوں کو ان کے کنٹریکٹ کے مطابق ہی پیسے ملنا چاہئے ،اب پی سی ایل برانڈ بن چکا ہے اور اگر کوئی غیر ملکی کھلاڑی نہ بھی آئیں تو بھی تماشائی پی ایس ایل کو پسند کریں گے ۔مشتاق احمد نے کہاکہ پی ایس ایل نے آخر کا ر مکمل طور پر پاکستان میں ہی ہونا ہے ،پی ایس ایل انتظامیہ کو چاہئے کہ پی ایس ایل کے اگلے ایڈیشن میں زیادہ سے زیادہ میچز پاکستان میں کروائیں ۔انہوں نے کہاکہ غیر ملکی کرکٹرز کو پاکستان آنے پر آمادہ کرنے کیلئے انتظامیہ کو سابق قومی کرکٹرز کی خدمات حاصل کرنی چاہئے کیونکہ ان کے کہنے پر غیر ملکی کرکٹرز کو زیادہ اعتماد ہوگا ۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -