حلقہ بندیوں کے معتبر ضین ارکان اسمبلی کو مدعو کر لیا : الیکشن کمیشن

حلقہ بندیوں کے معتبر ضین ارکان اسمبلی کو مدعو کر لیا : الیکشن کمیشن

  

اسلام آباد(صباح نیوز)الیکشن کمیشن آف پاکستان نے حلقہ بندیوں کے معترضین ارکان اسمبلی کو قواعدوضوابط کے مطابق کمیشن میں مدعو کرلیا ۔ واضح کیا گیا ہے کہ کلریکل غلطیوں کو درست کیا جاسکتا ہے اسی لیے عبوری رپورٹ جاری کی گئی جبکہ حلقہ بندی ورکنگ گروپ کے سربراہ وزیر نجکاری دانیال عزیز نے کہا ہے کہ الٹی گنگا بہہ رہی ہے اور غلطیوں کے بارے میں کہا جارہا ہے کوئی بات نہیں دیکھ لیں گے ۔ اس کو آسان نہ لیا جائے کیونکہ سارے ارکان اسمبلی رو رہے ہیں جبکہ اجلاس کی کارروائی کے دوران ساہیوال ڈویژن کے پانچ گاؤں کاکسی بھی حلقے میں اندراج نہ ہونے کا انکشاف ہوا ہے ۔ علاقے سے مسلم لیگ ن کے رکن قومی اسمبلی پیر عمران علی شاہ نے شواہد پیش کردیئے ہیں جبکہ ساہیوال ڈویژن کے قومی اسمبلی کے حلقوں کے نمبرز کا تعین بھی غلط کیاگیاہے ۔ جس حلقے کو ون قرار دینا تھا اس کو تین قرار دے دیا گیا ۔ ورکنگ گروپ تین دنوں میں اپنی رپورٹ مرتب کرنے میں بھی ناکام ہوگیا ہے اجلاس 26مارچ تک ملتوی کردیا گیا ۔ بدھ کو قومی اسمبلی کی حلقہ بندیوں سے متعلق ورکنگ گروپ کا اجلاس کنوینئر دانیال عزیز کی صدارت میں پارلیمنٹ ہاؤس میں ہوا پاکستان پیپلزپارٹی کی طرف سے حلقہ بندیوں کی خصوصی کمیٹی کی افادیت پوچھ لی گئی ہیں ۔عمران علی شاہ نے کہا کہ اب تو الیکشن کمیشن جانا بھی مشکل بنادیا گیا ہے ارکان پارلیمنٹ کو کمیشن جانے کیلئے پہلے گیٹ پر اپنے نام کا اندراج کروانا ہوگا میرے ساتھ بھی آج یہی سلوک ہوا ایک سید بادشاہ نے تو مجھ سے ملنے سے ہی انکار کردیا اور کہا کہ روم نمبر چار میں جائیں ۔ ہم غلطیوں کی نشاندہی کررہے ہیں ہمیں گیٹ پر روک لیا جاتا ہے ۔ اس پر ایڈیشنل سیکرٹری نے اجلاس میں معذرت کی اور کہا کہ آئندہ ایسی شکایت پیدا نہیں ہونے دیں گے ۔ وفاقی کابینہ کے اجلاس کے پیش نظرورکنگ گروپ کی کارروائی کو مختصر کرتے ہوئے وفاقی وزیر نجکاری دانیال عزیز نے اجلاس ملتوی کردیا ۔ اجلاس اب 26مارچ کو ہوگااور گروپ بروقت اپنا کام کرنے میں ناکام ہوگیا ہے ۔

الیکشن کمیشن

مزید :

صفحہ اول -