نواز شریف جانتے ہیں سنجرانی کون ، ابھی جواب دینے کا وقت نہیں : چیئر مین سینیٹ

نواز شریف جانتے ہیں سنجرانی کون ، ابھی جواب دینے کا وقت نہیں : چیئر مین سینیٹ

  

کوئٹہ، چاغی (بیورورپورٹ ، مانیٹرنگ ڈیسک ، نیوز ایجنسیاں ) چیئرمین سینیٹ میر صادق سنجرانی نے کہاہے سابق وزیراعظم نواز شریف ہر جگہ یہ کہتے ہیں سنجرانی کون ہے یہ میں بھی جانتاہوں اور وہ بھی جانتے ہیں وہ یہ بات کیوں کہتے ہیں ابھی وقت نہیں آیا کہ اسکا جوا ب دیا جا ئے وقت آنے پر اس بارے میں بھی اظہار خیال کرینگے ،سیاسی مخالفت اپنی جگہ ،بلوچستان کی روایت اپنی جگہ ہیں انشاء اللہ اس روایت کو ہر صورت برقرار رکھا جائیگا اپنی بزرگوں کی شان میں کوئی گستاخی نہیں کی جائے گی ان کا احتر ا م ہر صورت کیا جائیگا، ملک میں اسلامیت بقاء اور آ ئین کی با لا دستی کو ہر حالات میں برقرار رکھا جائیگا ہماری پہچان پاکستان سے ہے جو عناصر پاکستان یا بلوچستان کو نقصان پہنچانا چاہتے ہیں یا سوچ رہے ہیں وہ کبھی بھی اپنے اس ناپاک مقصد میں کامیاب نہیں ہونگے ،45سال کی عمر ہونے پر صدر پاکستان کا الیکشن لڑوں گا جو ذمہ داریاں مجھ پر ڈالی گئی ہے اسے ہر حالت میں پورا کرونگا یہ میر افرض اور ذمہ داری ہے ہم اپنے بزرگوں کو جواب نہیں دیتے میں تنقید کا جوا ب تنقید سے نہیں دیتا بلکہ پیار سے دیتاہوں ،بدھ کے روز کراچی روانگی اورقبل ازیں دالبندین میں صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے انکا کہنا تھا کوئی بھی شخص جس کی عمر 30سال ہو وہ سینیٹر بن سکتاہے میں بھی 30سے زیادہ عمر میں سینیٹر بن گیا ہوں اور جب میری عمر 45سال کو ہوجائے گی تو میں صدر کا الیکشن بھی لڑونگا، بلو چستا ن کو اس سے پہلے وزیراعظم اور ڈپٹی چیئرمین کا عہدہ دیا جاتارہاہے اب حالات تبد یل ہوگئے ہیں ، انشاء اللہ صدرپاکستان کا عہدہ بھی بلوچستان کو دیا جائے گا اور میں45سال ہونے کے بعد اس اہم منصب کے عہدے پر الیکشن ضرور لڑونگا ، سینیٹ میں ایسے قانون لائینگے جس سے بلوچستا ن کے عوام مستفید ہوں اور جلد وزیراعلی اور پی اینڈ ای سے بلوچستا ن کے فنڈز کے حوالے سے میٹنگ کروائینگے ۔دالبندین ٹو چاغی سٹرک کی تعمیر و مرمت کریں گے ،دالبندین کو گیس نوکنڈی کو بجلی کی فراہمی ترجیحات میں شامل ہے ، کیڈٹ کالج کے قیام کا اعلان کرتے ہوئے انکا کہنا تھا کوشش کرونگا دالبندین ٹو زارو تک اس روٹ کو نیشنل ہائی سے منسلک ہو ،ر و ڈ بہتر ہوگا توعوام مستفید ہونگے، انہوں نے چاغی کے قریب واقع زیارت کے مقام پر حضرت سید بابا بلا نوش ؒ کے مزار پر حاضری دی اور چادر چڑھائی ،انکا کہنا تھا ہمیں اپنی بزرگ ہستیوں کی نقش قدم پر چلنا چاہیے جو لوگوں کی بھلائی کا سبق دیتے رہے ہیں ، سینیٹ میں بطور چیئرمین میرا انتخاب بلوچستان میں تبدیلی کا باعث ہوگا ،اپنے عمل اور کارکردگی سے مخالفین کو شکست دونگا ، سینیٹ کمیٹیوں کے ذریعے سی پیک کے مغربی روٹ کے بارے میں معلومات لیکر جلد کام شروع کراکر یہاں کے لوگوں کو بھی سی پیک کے ثمرات میں شامل کرینگے۔

چیئرمین سینیٹ

مزید :

علاقائی -