آج پاکستان سمیت دنیا بھر میں ’’ ورلڈ واٹر ڈے‘‘ منایا جائیگا

آج پاکستان سمیت دنیا بھر میں ’’ ورلڈ واٹر ڈے‘‘ منایا جائیگا

  

اسلام آباد(خصوصی رپورٹ) اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اقدامات کے تحت ہر سال 22مارچ کو ورلڈ واٹر ڈے منایا جاتا ہے۔ یہ دن منانے کا مقصد عوام میں آگاہی پیدا کرنا اور حکومتوں کی توجہ پانی کے مسئلہ کی اہمیت کی جانب مبذول کرانا ہے۔ فرانسیسی سفارتخانہ کے بیان کے مطابق ماحولیاتی تبدیلیوں کے خطرات، خصوصاً آبی ذرائع، پانی اور ماحولیات کے بارے میں عالمی سطح پر کی جانے والی کوششیں ، جن میں پانی اور ماحولیات کے بارے میں پیرس معاہدہ، پانی اور ماحولیات کے بارے میں میگا سٹی الائنس، افریقہ میں پانی اور ماحولیات کے حوالہ سے 100 منصوبوں پر مشتمل انکوبیٹر پلیٹ فارم، ایسے اقدامات ایک مضبوط اور مستحکم موبلائزیشن کا باعث بن رہے ہیں۔یہ پلیٹ فارم جو COP22 میں منصوبوں کو ٹھوس شکل دینے، ان کے لئے رقوم کی فراہمی میں آسانیاں پیدا کرتا ہے اس کی جانب فرانس نے گزشتہ سال 12دسمبر کو فرانس کے زیر اہتمام ’’ون پلانیٹ سمٹ‘‘ میں توجہ مبذول کرائی گئی تھی۔ اس موقع پر زمین، پانی کے وسائل کو ماحولیاتی تبدیلیوں کے اثرات سے بچانے کے لئے 12کمٹمنٹس کئے گئے۔فرانس نے پانی تک رسائی کے معاملات کو ترقیاتی امداد کا محور بنا رکھا ہے۔فیصل آباد میں پانی کے شعبے میں پاکستان اور فرانس کا باہمی تعاون چھ سال سے کامیابی سے جاری ہے۔یہ وفاقی اور پنجاب حکومت کی ترجیحات میں شامل ہے۔ 2010ء کے اختتام پر مالی پروٹوکول کے تحت 30ملین یورو سے زائد خرچ کئے جا چکے ہیں۔ یہ فنڈز فیصل آباد میں پانی کے ذرائع میں توسیع کے فیز ۔ ون کے لئے تھے۔ اس بارے میں دو فرانسیسی کمپنیوں، آرٹیلیو اور ونس گرانڈز سے کنٹریکٹ ہوا اور ان منصوبوں کو حتمی شکل دی جا رہی ہے۔ اس منصوبے کے تسلسل کے بارے میں سٹڈی کی جا رہی ہے۔ 2017ء میں فرانس نے ایک ملین یورو کی فراہمی کی منظوری دی جو تربیتی پروگرام پر خرچ ہونگے۔ماحولیاتی تبدیلی کے حوالے سے پاکستان کے کمزور پہلو خصوصاً آبادی میں اضافے کے حوالے سے پانی کی کمی، شہروں کی جانب منتقلی ایک بڑا چیلنج ہیں۔ آبادی کے بڑھتے ہوئے رحجان کے تناظر میں فرانس پاکستان میں پانی کی بہتر مینجمنٹ کے لئے تعاون جاری رکھے گا اس حوالے سے اپنی مہارت تجربہ اور جانکاری فراہم کی جائے گی۔

واٹر ڈے

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -