روڈ حادثات سے سالانہ 518 بلین ڈالرز ضائع ہوتے ہیں،سلمان زبیر

روڈ حادثات سے سالانہ 518 بلین ڈالرز ضائع ہوتے ہیں،سلمان زبیر

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)جامعہ کراچی کے شعبہ جغرافیہ کے اسسٹنٹ پروفیسرڈاکٹر سلمان زبیرنے کہا کہ پوری دنیا میں سالانہ روڈ حادثات کی وجہ سے 518 بلین ڈالرز ضائع ہورہے ہیں جبکہ ہرسال تقریبا12 لاکھ سے زائد افراد روڈ حادثات کی وجہ سے اموات کا شکارہوجاتے ہیں اوردوتاپانچ کروڑ افراد مختلف نوعیت کے روڈ حادثات کی وجہ سے زخمی ہورہے ہیں ۔پاکستان میں روڈ حادثات کی شرح میں بتدریج اضافہ ہورہاہے۔موجودہ اعدادوشمار کے مطابق پوری دنیا میں اموات کی وجوہات میں روڈ حادثات نویں نمبر پر ہے اور اگر اس پر قابونہ پایاگیا تو2020 تک یہ تعداد تیسرے نمبر پر آجائے گی۔صرف کراچی میں روڈ حادثات کی وجہ سے ہر سال تقریباً50 ارب سے زائد روپے ضائع ہورہے ہیں۔روڈ حادثات کا شکار ہونے والے افراد میں اکثریت نوجوانوں کی ہوتی ہے ،لہذا ہمارے نوجوان طبقے کو چاہیئے کہ وہ نہ صرف خود ٹریفک کے قوانین کی پاسداری کریں بلکہ دوسروں کو بھی اس کی ترغیب بھی دیں ۔اگرہماری نوجوان نسل مذکورہ مسئلے کو حل کرنے کے لئے اپنا مثبت اور کلیدی کردار اداکریں توکوئی وجہ نہیں کہ روڈ حادثات میں کمی واقع نہ ہو۔ان خیالات کا اظہا ر انہوں نے جامعہ کراچی کے شعبہ جغرافیہ اور نیشنل ہائی وے اینڈ موٹر وے پولیس کے زیر اہتمام روڈسیفٹی آگاہی واک اور جامعہ کراچی کے کلیہ سماجی علوم کی سماعت گاہ میں منعقدہ سیمینارسے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پرجامعہ کراچی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد اجمل خان، ایس ایس پی جامشوروموٹروے پولیس کرم اللہ سومرو، نعیم اللہ شیخ اسٹاف آفیسر ڈئی آئی جی ،پروفیسر ڈاکٹر میر شبر علی ،پروفیسر ڈاکٹر جمیل کاظمی اور دیگر اساتذہ وموٹروے پولیس افسران بھی موجود تھے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -