ملک کا استحکام اسلام کے نفاذکے بغیر ممکن نہیں،حافظ عاکف سعید

ملک کا استحکام اسلام کے نفاذکے بغیر ممکن نہیں،حافظ عاکف سعید

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)پاکستان اسلام کے نام پر بنا تھا اور اس کا استحکام بھی اسلام کے نفاذکے بغیر ممکن نہیں ۔یہ ملک اللہ کی خاص نصرت اور فیضان رسول ﷺ سے عطا ہوا تھا لیکن ہم اللہ کے دین سے غداری کے مرتکب ہونے کی وجہ سے معتوب ہوئے اور ہمارے اسی طرز عمل کا نتیجہ سیاسی ، معاشی اور معاشرتی عدم استحکام کی صورت میں بھی ظاہر ہو رہا ہے ۔اب ملک میں دوبارہ استحکام اسی صورت میں آسکتا ہے جب ہم اللہ اور رسول ﷺ کے سچے وفادار بن جائیں ۔ ان خیالات کا اظہار حافظ عاکف سعید امیر تنظیم اسلامی نے قرآن آڈیٹوریم میں منعقدہ سیمینار بعنوان: ’’استحکام پاکستان؟‘‘ میں صدارتی خطبہ دیتے ہوئے کیا ۔ انھوں نے کہا کہ ہم اللہ اور اس کے رسول ﷺ سے بے وفائی کے مرتکب ہو کر آدھا ملک کھو چکے ہیں اور باقی آدھا ملک بھی عدم استحکام کا شکار ہے ۔ سیاسی عدم استحکام سے ایک بار پھر 1971ء جیسے حالات پیدا ہو چکے ہیں ۔ علاوہ ازیں ملک معاشی طور پر دیوالیہ ہونے کے قریب ہے ، قرض کے مے پی پی کر ہم بدحال ہو چکے ہیں ۔ جس سے عالمی قوتوں نے ہمیں معاشی شکنجہ میں جکڑ دیا اور ہماری آزادی ، خود مختاری اور قومی عزت و آبرو داؤ پر لگ چکی ہے ۔ ہماری ملکی سلامتی اور بقاء کو شدیدخطرات لاحق ہو چکے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ان تمام مسائل کا حل اسی میں ہے کہ ہم اللہ و رسول ﷺ کے سچے وفادار بن کر ملک میں اسلامی نظام کا نفاذ ممکن بنائیں ۔سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے تنظیم اسلامی کے ناظم نشرواشاعت جناب ایوب بیگ مرزا نے کہا کہ پاکستان دنیا کا وہ واحد ملک ہے جو مدینہ کے بعد اسلام کے نام پر بنا ہے ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -