امریکہ کے لئے نامزد پاکستانی سفیر علی جہانگیر صدیقی نیب آفس میں پیش

امریکہ کے لئے نامزد پاکستانی سفیر علی جہانگیر صدیقی نیب آفس میں پیش
امریکہ کے لئے نامزد پاکستانی سفیر علی جہانگیر صدیقی نیب آفس میں پیش

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن ) امریکہ کے لئے نامزد پاکستانی سفیر علی جہانگیر صدیقی لاہور میں نیب آفس پیش ہو گئے ،علی جہانگیر کو کمپنی حصص کی ان سائیڈ ٹریڈنگ کے الزام میں طلب کیا گیا تھاکیونکہ علی جہانگیر نے حصص 11کے بجائے حکومتی اداروں کو 35روپے میں فروخت کیے جس سے حکومتی اداروں کو اربوں روپے کا نقصان ہوا تھا ۔ 16 مارچ کو نیب لاہور نے امریکہ کے لیے نامزد پاکستانی سفیر علی جہانگیر صدیقی کے خلاف تحقیقات کا آغاز کرتے ہوئے انہیں آج طلب کیا تھا۔

نیب حکام کے مطابق علی جہانگیر صدیقی پر مجموعی طور پر چالیس بلین روپے کی کرپشن کا الزام ہے۔ وہ سٹاک ایکسچینج میں ان سائیڈ ٹریڈنگ، بیرون ملک سرمایہ کاری کر کے شیئر ہولڈرز کو اربوں روپے نقصان پہنچانے، اپنی ایک اور کمپنی کے حصص سرکاری اداروں کو مہنگے داموں فروخت کر کے قومی خزانے کو بیس ارب روپےنقصان پہنچانے کے الزامات کی زد میں ہیں۔علی جہانگیر صدیقی ایزگرڈ کمپنی، ایگری ٹیک، ایئربلیو سمیت کئی اداروں سے منسلک ہیں۔ نیب لاہور نے ان پر کرپشن الزامات کے حوالے سے ایس ای سی پی کی رپورٹ کومنظوری کیلئے چیئرمین نیب کو بھجوایا تھا جنہوں نے منظوری دے دی۔

علی جہانگیر نے اپنی کمپنی ایگری ٹیکس کے حصص 11 روپے کی بجائے حکومتی اداروں کو 35 روپے میں فروخت کئے۔ علی جہانگیر صدیقی کے اس اقدام کی وجہ سے حکومتی اداروں کو 20ارب روپے کانقصان ہوا جبکہ ایگزرڈ کمپنی کے شیئر ہولڈرز کو بھی اربوں روپے کا نقصان پہنچایا۔

مزید :

قومی -