سپیکر سندھ اسمبلی سراج درانی کے جسمانی ریمانڈ میں 10روز کی توسیع

سپیکر سندھ اسمبلی سراج درانی کے جسمانی ریمانڈ میں 10روز کی توسیع

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)احتساب عدالت نے سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج کے جسمانی ریمانڈ میں تیسری مرتبہ توسیع کردی۔قومی احتساب بیورو (نیب) کے حکام نے پیپلزپارٹی کے رہنما اور سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کو کراچی کی احتساب عدالت میں پیش کیا۔دورانِ سماعت آغا سراج درانی نے عدالت میں کہا کہ میری فیملی کو ملزم بنایا جارہا ہے، اس پر عدالت نے سپیکر سندھ اسمبلی سے مکالمہ کیا کہ اپنے بارے میں بتائیں۔ملزم نے عدالت کو بتایا کہ مجھے ایک چھوٹے سے کمرے میں رکھا ہوا ہے، نہ وہاں روشنی ہے اور نہ کوئی اخبار ٹی وی، گھر والوں سے نہیں ملنے دیا، میرے باورچی کو پکڑ لیا گیا ہے۔نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ باورچی کے اکاؤنٹ میں بڑی بڑی ٹرانزیکشن ہوئی ہیں اس لیے پکڑا ہے۔نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ ملزم نے پچھلی دفعہ شکایت کی تھی جس پر کمرے میں اے سی لگا دیا ہے، یہ 12 بجے اٹھتے ہیں، ناشتہ کرتے ہیں اور اخبار پڑھتے ہیں۔نیب پراسیکیوٹر نے عدالت سے استدعا کی کہ ملزم سے مزید تفتیش درکار ہے لہٰذا 15 روز کا جسمانی ریمانڈ دیا جائے۔عدالت نے نیب کی 15 روز کی استدعا کو مسترد کرتے ہوئے ملزم کا 10 روز کا ریمانڈ دیتے ہوئے جسمانی ریمانڈ میں تیسری مرتبہ توسیع کردی۔اس سے قبل عدالت ملزم کا 21 فروری، یکم مارچ اور 11 مارچ کو جسمانی ریمانڈ دے چکی ہے۔

آغا سراج درانی

مزید : صفحہ اول