سی پیک پر کام میں سستی کا تاثر درست ،چینی سفیر

سی پیک پر کام میں سستی کا تاثر درست ،چینی سفیر

اسلام آباد(آن لائن ) چین اور پاکستان ایک دوسرے کے قابل اعتماد دوست ہیں جو ہر مشکل میں ایک دوسرے کیساتھ کھڑے رہے ہیں، سی پیک ایک گیم چینجر منصوبہ ہے جس سے نہ صرف پاکستان بلکہ پورے خطے پر مثبت اثرات پڑینگے اب تک سی پیک پروگرام کے تحت 19رب ڈالر کے 22پراجیکٹ پر کام ہورہا ہے جس میں سے 11مکمل ہو چکے جبکہ 11پر کام جاری ہے دن بیلٹ ون روڈ منصوبے سے بین البراعظمی تعلقات اور تجارت میں بہتری آئیگی ۔ یہ تاثر درست ہے کہ سی پیک پر کام کی رفتار میں سستی آئی ہے لیکن اب اس میں بہتری آرہی ہے اور رفتہ رفتہ اس پہ پہلے کی طرح برق رفتاری سے کام چلنا شروع ہو جائیگا۔ان خیالات کا اظہار عوامی جمہوریہ چین کے پاکستان میں قائم مقام سفیر اور سی پیک کے انچارجZhao lijian نے کالم نویسوں اور صحافیوں اور اینکرز پر مشتمل فورم IFPCA انٹر نیشنل فورم فار پاکستانیز کا لمسٹ اینڈاینکرز کے نمائندہ وفد سے ملاقات میں کیا ۔وفد کی قیادت صدر فورم آصف نور کررہے تھے ۔جبکہ شرکاء میں نائب صدر عقیل احمد ترین ، خزانچی عمر انعام ، سیکرٹری انفارمیشن وقار فانی ،صدر الدین صدر ،فرحت آصف نور، نعیم صدیقی ، ،مبین خان ،آصف خورشید ، آسر گل موجود تھے۔ چین کچھ عرصہ بعد ایک بلین ڈالر پاکستان کے سوشل سیکٹرز میں بطور فری ایڈ دے گا جس سے ہسپتال ، سکول ٹینس کورٹس ، باتھ روم، صاف پانی اورغربت کے خاتمے کے منصوبے مکمل کئے جائینگے۔انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ سی پیک سرمایہ کاری کیلئے ون ونڈو آپریشن ہوتا لیکن بد قسمتی سے اس عمل کو مشکل بنادیا گیا ۔روڈ بننے سے فاصلے کم ہونگے۔ مستقبل قریب میں لاہور سے کراچی بلٹ ٹرین چلانے پر بھی غور کررہے ہیں۔

مزید : صفحہ اول