عباسی اسپتال اور فائر بریگیڈ ملازمین کو تنخواہیں ادا کی جائیں: حافظ نعیم الرحمن

عباسی اسپتال اور فائر بریگیڈ ملازمین کو تنخواہیں ادا کی جائیں: حافظ نعیم ...

کراچی(اسٹاف رپورٹر)امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے عباسی شہید اسپتال کی ناقص صورتحال اور ہاؤس آفیسرز کو4ماہ سے تنخواہوں کی عدم ادائیگی پر گہری تشویش کااظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ سٹی حکومت کے پاس صرف ایک اسپتال ہے جس کی صورتحال بھی انتہائی خراب ہے ،اسپتال میں کام کرنے والے ملازمین کو تنخواہیں نہیں دی جارہی ہیں ،ڈاکٹرز احتجاج پر مجبور ہیں اوراو پی ڈی بند ہونے کی صورت میں مریضوں کو مشکلات کا سامنا ہے جبکہ دوسری جانب بلدیہ کراچی کے ماتحت ادارے فائر بریگیڈ کے ملازمین بھی اوورٹائم اور فائر رسک الاؤنس کی ایک سال سے عدم ادائیگی پر سراپا احتجاج ہیں اور ہڑتال کرنا چاہتے ہیں ۔ فائر بریگیڈ اور اسپتال دونوں ہی اہم ترین ادارے ہیں۔ اگر ان دونوں اداروں کے کارکنان ہڑتال کردیں اور شہر میں خدا نخواستہ کوئی ہنگامی صورتحال ہوجائے تو پھر کیا ہوگا۔ ان احتجاجی ملازمین کو موردِالزام ٹہرانے کے بجائے ان کے واجبات کی ادائیگی کو ممکن بنایا جائے حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ یہ بات سمجھ سے بالاتر ہے کہ جب بجٹ میں تنخواہیں مختص کی جاتی ہیں تو پھر ملازمین کو ادائیگی کیوں نہیں کی جاتی۔ گزشتہ دنوں میئر کراچی وسیم اختر نے جب عباسی شہید اسپتال کا دورہ کیا تھا تو اس وقت بھی ان ہاؤس آفیسرز اور پوسٹ گریجویشن کے ٹرینیرز نے احتجاج کیا تھا جس کے بعد میئر کراچی نے فوری طور پر تنخواہوں کی ادائیگی کا حکم دیا تھا۔ انہوں نے اْسی دن انکشاف کیا تھا کہ تنخواہوں کی رقم موجود ہے مگر ملازمین کو ادا نہیں کی جارہی ہے۔ وہ یہ انکشاف کرکے اور حکم دے کر چلے گئے مگر ملازمین ابھی تک اپنی تنخواہوں سے محروم ہیں۔ بعض اطلاعات کے مطابق بلدیہ ہی کے اعلیٰ افسران یہ رقم بینک میں رکھ کر اس کامنافع کھاتے ہیں۔ جب شور مچتا ہے تو کچھ ادائیگی کردی جاتی ہے ورنہ اس کامنافع استعمال کرتے رہتے ہیں۔ اس وقت صورتحال یہ ہے کہ بلدیہ کے زیر انتظام چلنے والے سارے ہی ادارے بدترین بدانتظامی کا شکار ہیں اور بلدیاتی قیادت کراچی کے مسائل حل کرنے کے بجائے اختیارات اور فنڈز کی کمی کا رونا روتی رہتی ہے۔ آج تک بلدیہ کی قیادت یہ نہیں بتاسکی کہ شہر کی سڑکوں پر جھاڑو دلوانے میں کون سے فنڈز درکار ہیں۔ اس کا عملہ موجود ہے مگر اس سے کام نہیں لیا جاتا۔یہ سلسلہ اب بند ہو نا چاہیئے ۔ بلدیہ کے ماتحت اداروں کی ابتر صورتحال کو بہتر کیا جائے اور عملے کو اپنے کام کا پابند بنایا جائے ۔ عباسی شہید ہسپتال اور فائر بریگیڈ میں جن ڈاکٹر اور ملازمین کی تنخواہیں رُکی ہوئی ہیں وہ فی الفور جاری کی جائیں ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر