ججز نظربندی کیس: سابق فوجی صدر پرویز مشرف کی درخواست ضمانت مسترد

ججز نظربندی کیس: سابق فوجی صدر پرویز مشرف کی درخواست ضمانت مسترد
ججز نظربندی کیس: سابق فوجی صدر پرویز مشرف کی درخواست ضمانت مسترد

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت نے ججز نظربندی کیس میں پرپرویز مشرف کی درخواست ضمانت مسترد کردی۔ انسداددہشتگردی کی خصوصی عدالت کے جج سید کوثر عباس زیدی نے پرویز مشرف کی درخواست ضمانت کی سماعت کی ۔ملزم کے وکیل الیاس صدیقی نے موقف اپنایاکہ اُس وقت کے صدر اوراُن کے موکل نے ججوں کو نظر بند کرنے کا کوئی حکم نہیں دیا، عدالت ضمانت پر رہائی کا حکم دے ، اگر کوئی حکم موجود ہے تو وہ استغاثہ عدالت میں پیش کرے ۔ پبلک پراسیکیوٹر عامر ندیم تابش نے ضمانت لینے کی مخالفت کرتے ہوئے کہاکہ ملزم کیخلاف دہشتگردی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج ہے ، اُس شخص کی ضمانت بنتی ہے جس کے جرم کی سزا دس سال یا اس سے کم بنتی ہو، پرویز مشرف کے خلاف جن دفعات کے تحت مقدمہ درج ہے ، اُس کی سزا کم سے کم دس سال اور زیادہ سے زیادہ عمر قید بنتی ہے لہٰذا درخواست ضمانت خارج کی جائے ۔ عدالتی استفسار پر پبلک پراسیکیوٹر نے موقف اپنایاکہ اُنہیں صرف ضمانت کیلئے ہدایات ملی ہیں ، پولیس چالان جمع کراچکی ہے ۔عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیااور بعدازاں درخواست ضمانت خارج کردی ۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں


loading...