نگران دور حکومت میں ہونیوالے تقرروتبادلے معطل ، عارضی سیٹ اپ کے مینڈیٹ میں روزمرہ امور اور انتخابات ہیں :سپریم کورٹ

نگران دور حکومت میں ہونیوالے تقرروتبادلے معطل ، عارضی سیٹ اپ کے مینڈیٹ میں ...
نگران دور حکومت میں ہونیوالے تقرروتبادلے معطل ، عارضی سیٹ اپ کے مینڈیٹ میں روزمرہ امور اور انتخابات ہیں :سپریم کورٹ

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے لیگی رہنماءخواجہ آصف کی درخواست سماعت کیلئے منظور کرتے ہوئے نگران دورحکومت میں ہونیوالے تقرروتبادلے معطل کردیئے اور نگران حکومت سے تقرریوں سے متعلق جواب طلب کرتے ہوئے سماعت چار جون تک ملتوی کردی ۔ چیف جسٹس نے نگران دورحکومت میں اہم عہدوں پر ہونیوالے تقرروتبادلوں کیخلاف خواجہ آصف کی درخواست کی سماعت کی ۔ عدالت نے قراردیاہے کہ نگران حکومت کے مینڈیٹ میں روزمرہ کے معاملات شامل ہیں ، تقرروتبادلے نہیں ۔عدالت نے عبوری حکم نامے میں کہاکہ نگران حکومت روزمرہ امور اور انتخابات کراسکتی ہے،متاثرہ افسران عدالت سے رجوع کرسکتے ہیں اور تقرریاں معطل کردیں ۔ چیف جسٹس نے خواجہ آصف کو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ پٹیشن کا اطلاق آپ کی حکومت پر بھی ہوگا، تمام تقرریاں شفاف اور قانون کے مطابق ہوں گی جس پر درخواست گزار کاکہناتھاکہ میرٹ پر تقرریوں کو یقینی بنائیں گے ۔اٹارنی جنرل نے موقف اپنایاکہ اُنہیں اس سلسلے میں ہدایات لینی ہیں جس پر فاضل عدالت نے اٹارنی جنرل کو ہدایات لینے کا حکم دیتے ہوئے سماعت چار جون تک ملتوی کردی ۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں


loading...