نواز شریف اور زرداری کی ملاقات، دونوں نے ایک دوسرے کوصدرو وزیراعظم تسلیم کرلیا

نواز شریف اور زرداری کی ملاقات، دونوں نے ایک دوسرے کوصدرو وزیراعظم تسلیم ...
نواز شریف اور زرداری کی ملاقات، دونوں نے ایک دوسرے کوصدرو وزیراعظم تسلیم کرلیا

  


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)چینی وزیراعظم لی کی چیانگ کے اعزاز میں دیئے گئے ظہرانے کے دوران ایوان صدر میں صدر مملکت آصف علی زرداری اور ن لیگ کے قائد میاں محمد نواز شریف کے درمیان ون آن ون ملاقات ہوئی ہے جس میں نواز شریف نے زرداری کو آئینی صدر اورا ٓصف علی زرداری نے وزیراعظم تسلیم کرلیا۔ ملاقات میں ملک کی مجموعی صورتحال اور اقتدار کی منتقلی پر تبادلہ خیالات کیا گیا۔ اس موقع پر صدر آصف علی زرداری نے نواز شریف کو انتخابات میں کامیابی پر مبارکباد دی اور اس امید کا اظہار کیا کہ آئندہ حکومت آئین اور قانون کی پاسداری کرتے ہوئے عوام کی خدمت اور جمہوریت کے استحکام میں اپنا کردار ادا کرے گی۔ مسلم لیگ کے سربراہ اور ممکنہ وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ آصف زرداری ملک کے آئینی صدر ہیں اور انہیں عوام نے مینڈیٹ دیا ہے جبکہ صدر آصف علی زرداری کا کہنا ہے کہ وہ نواز شریف کو ابھی سے ہی وزیر اعظم تسلیم کرتے ہیں۔ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے نواز شریف نے کہا کہ صدر زرداری کے ساتھ ملاقات میں اچھی بات چیت ہوئی، ہم ماضی کی تلخیاں بھلا کر آگے بڑھنا چاہتے ہیں، ہمیں اپنی ذات کے بجائے ملکی مفادات کو ترجیح دینا ہوگی، اگر ہم اپنی ذات کو سامنے رکھتے تو شاید آج یہ ملاقات نہ ہوتی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی بقا اور ترقی کے لیے ساتھ چلیں گے کیونکہ پاکستان کو درپیش مسائل کے حل کے لئے اداروں اور رہنماو¿ں کے درمیان ہم آہنگی ضروری ہے۔ صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو میں صدر زرداری نے کہا کہ وہ نواز شریف کی مفاہمتی پالیسی کی حمایت کرتے ہیں، ذاتی طور پر وہ نواز شریف کو وزیراعظم ہی سمجھتے ہیں، وزارت عظمیٰ کے دوران انہیں ایوان صدر سے بھرپور تعاون حاصل رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ بحیثیت وزیر اعظم نواز شریف کی حمایت کا فیصلہ پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمینٹیرینز کے سربراہ مخدوم امین فہیم کریں گے کیونکہ انہیں پارٹی قیادت سے علیحدہ کردیا گیا ہے۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں


loading...