بجلی شعبے کے زیر گردش قرضوں کو حل کرنے کیلئے بہتر فیصلہ سازی کی ضرورت ہے: عشرت حسین

بجلی شعبے کے زیر گردش قرضوں کو حل کرنے کیلئے بہتر فیصلہ سازی کی ضرورت ہے: عشرت ...
بجلی شعبے کے زیر گردش قرضوں کو حل کرنے کیلئے بہتر فیصلہ سازی کی ضرورت ہے: عشرت حسین

  


 کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) سٹیٹ بینک کے سابق گورنر اور انسٹیٹیوٹ آف بزنس ایڈمنسٹریشن کے ڈائریکٹر ڈاکٹر عشرت حسین نے کہا ہے کہ بجلی شعبے کے زیر گردش قرضوں کو حل کرنے کیلئے صرف باتیں نہیں بلکہ بہتر فیصلہ سازی کی ضرورت ہے۔ نجی ٹی وی جیو نیوز سے بات کرتے ہوئے ڈاکٹر عشرت حسین نے بتایا کہ بجلی کی تقسیم درست کرنے کی ضرورت ہے جبکہ اس سے متعلق سینٹرل پاور پرچیزنگ کو ڈیسکوز کو فراہم کی جانے والی بجلی پر اپنا ڈیٹا روزانہ کی بنیاد پر تیار کرنا ہوگا۔ انہوں نے ایک مثال دیتے ہوئے کہا کہ اگر بجلی کی قیمت 10 روپے ہے تو ریکوری صرف 6 روپے ہورہی ہے تاہم ریکوری اور بجلی کی قیمت کے فرق پر قابو پانا مشکل نہیں۔ ڈاکٹر عشرت حسین نے تجویز دیتے ہوئے کہا کہ بجلی کے اداروں کے سربراہوں کی تعیناتی میرٹ پر ہونی چاہئے جبکہ ریکوری کے نظام کو بہتر بنانے کے ساتھ ایک بہتر سیاسی فیصلے کی ضرورت ہے۔

مزید : بزنس


loading...