رواں مالی سال کا بجٹ ختم کرنے کیلئے 20جون کی ڈیڈ لائن شہر کی اکھاڑ پچھاڑ شروع

رواں مالی سال کا بجٹ ختم کرنے کیلئے 20جون کی ڈیڈ لائن شہر کی اکھاڑ پچھاڑ شروع ...

                        لاہور(جاوید اقبال) صوبائی دارالحکومت کے ترقیاتی اداروں نے رواں مالی سال کا بجٹ ختم کرنے کے لئے 20جون کی ڈیڈ لائن مقرر کر دی ہے اور 2013-14کے بجٹ کو ختم کرنے کے لئے شہر کو اکھاڑ پچھاڑ دیا ہے گلی محلوں کی گلیاں نالیاں پختہ کرنے کا کام شروع ہو گیا ہے نئی واٹر سپلائی، سیوریج کی لائنیں ڈالنے ، پارکس مرمت کرنے پھول بوٹے لگانے کا کام شروع ہو گیا ہے۔بتایا گیا ہے کہ رواں مالی سال 2013-14کے بجٹ کو 20جون تک خرچ کرنے کے لئے ترقیاتی اداروں نے فنڈز کا بے دریغ استعمال شروع کر دیا ہے اور نام نہاد سکیموں کو مکمل کرنے کے لئے ٹھیکیداروں اور کمپنیوں کو کام ٹھیکے پر دینے کی لوٹ سیل شروع کر دی ہے جبکہ کمپنیوں کے واجبات کے بل یومیہ بنیادوں پر کلیئر کرنے کے لئے اداروں نے اپنے فنانس ڈیپارٹمنٹس کو ہدایات جاری کر دی ہیں۔بتایا یا ہے کہ صوبائی دارالحکومت کے ترقیاتی اداروں، واسا، ایل ڈی اے ٹیپا کے علاوہ محکمہ صحت کے ماتحت ہسپتالوں، ٹاﺅنوں میں رواں مالی سال کے خاتمے سے قبل 20جون تک اسی سال کے لئے مختص بجٹ کا بچ جانے والا بڑا حصہ خرچ کرنے کے لئے بے دریغ فنڈز کا استعمال شروع کر دیا ہے بتایا گیا ہے کہ حکومت نے ترقیاتی اداروں اور محکموں کو وارننگ دی تھی کہ جس محکمے یا ادارے نے اپنے ترقیاتی کاموں کے لئے مختص شدہ فنڈز مقررہ وقت تک خرچ نہ کئے اور فنڈز محکمے کو واپس کئے تو اس ادارے کے سربراہان کے خلاف کارروائی کی جائے گی ذرائع نے بتایا ہے کہ محکموں نے اپنے فنڈز کا بڑا حصہ خرچ کرنے کی بجائے روک رکھا تھا اور حکم ملتے ہی محکموں نے بے دریغ فنڈز کا استعمال شروع کر دیا ہے اور شہر میں جگہ جگہ ترقیاتی کام شروع ہو گئے ہیں زیادہ تر علاقوں میں نئی نویلی گلیاں ، نالیاں اکھاڑ کر دوبارہ ان کی مرمت شروع کر دی گئی ہے اور گلیاں پی سی بی بنائی جا رہی ہیں سیوریج تبدیل کیا جا رہا ہے اس طرح ہسپتالوں میں غریب مریضوں کو فنڈز خرچ کرنے کے لئے ادویات ملنا شروع ہو گئی ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1