جرمنی پر یوکرائن کی خاص ذمہ داری عائد ہوتی ہے، جرمن وزیر خارجہ

جرمنی پر یوکرائن کی خاص ذمہ داری عائد ہوتی ہے، جرمن وزیر خارجہ

 بر لن (آن لائن)جرمن وزیر خارجہ فرانک والٹر شٹائن مائر نے کہا ہے کہ یوکرائن کے حوالے سے جرمنی پر خاص ذمہ داری عائد ہوتی ہے۔ڈوئچے ویلے کے ساتھ اپنے خصوصی انٹرویو میں یوکرائن کی صورتِ حال پر ا ظہارِ خیال کرتے ہوئے پچیس مئی کو یوکرائن میں مجوزہ صدارتی انتخابات سے متعلق ایک سوال کے جواب میں شٹائن مائر نے کہا کہ سلامتی و تعاون کی یورپی تنظیم او ایس سی اے کے دائرے میں ان انتخابات کے لیے بھرپور تیاریاں عمل میں لائی گئی ہیں۔

 ا±نہوں نے کہا، وہ امید کرتے ہیں کہ مشرقی یوکرائن کے شہریوں سمیت یوکرائن کے تمام باشندوں کو ان انتخابات میں حصہ لینے کا موقع ملے گا۔ جرمن وزیر نے اسی ہفتے یوکرائن کے شہر ڈونیٹسک میں مجوزہ ایک اور گول میز کانفرنس کا ذکر کرتے ہوئے امید ظاہر کی کہ وہاں ان انتخابات کی اہمیت کو اجاگر کیا جا سکے گا۔فرانک والٹر شٹائن مائر نے کہا کہ ایک نئے صدر کے انتخاب کے ساتھ ہی یوکرائن میں ایک ایسا قانونی عمل شروع ہو جائے گا، جس میں آگے چل کر آئینی اصلاحات اور بالآخر پارلیمانی انتخابات منعقد کیے جا سکیں گے۔جرمن وزیر خارجہ نے کہا کہ فی الوقت کسی کے بھی خلاف نئی پابندیاں عائد کرنے کے بارے میں نہیں سوچا رہا بلکہ پوری توجہ آئندہ اتوار کو مجوزہ صدارتی انتخابات کے انعقاد پر مرکوز کی جا رہی ہے اور امید کی جا رہی ہے کہ ان میں زیادہ سے زیادہ رائے دہندگان شرکت کریں گے۔ایک سوال کے جواب میں وزیر خارجہ کا کہنا تھا ایک نئے صدر کے انتخاب کے بعد بھی یوکرائن کے حوالے سے کئی چیلنجز درپیش ہوں گے، جن میں ایک نئے آئین کی تیاری کے ساتھ ساتھ ملک کو مستحکم معاشی بنیادوں پر کھڑا کرنا بھی شامل ہے۔

مزید : عالمی منظر