کرائے کے گھر میں اکیلی رہائش پذیر 28 سالہ خاتون پر اسر ار طور پر ہلاک

کرائے کے گھر میں اکیلی رہائش پذیر 28 سالہ خاتون پر اسر ار طور پر ہلاک
کرائے کے گھر میں اکیلی رہائش پذیر 28 سالہ خاتون پر اسر ار طور پر ہلاک

  

                       لاہور(لیاقت کھرل) ہربنس پورہ کے علاقہ میں 28سالہ خاتون گھر میں پر اسرار طور پر مردہ حالت میں پائی گئی، شادی شدہ ثمن وقار آئیڈیل ہاﺅسنگ سوسائٹی میں کرائے کے گھر میں اکیلی رہائش پذیر تھی ، گزشتہ صبح سویرے کمرہ سے بدبو آنے پر بالائی منزل پر رہائش پذیر محلے داروں نے پولیس کو اطلاع دی، جس نے موقع پر آ کر دیکھا تو ثمن وقار کے منہ اور کانوں سے خون بہہ رہا تھا،پولیس کسی نتیجہ پر نہیں پہنچ سکی کہ آیا خاتون کو کسی نے زہر دیکر موت کے گھاٹ اتارا یا اس نے کوئی زہریلی چیز کھائی جس سے اس کی موت واقع ہوئی ہے۔ اندھے واقعہ کے دوران ہونے والی ہلاکت پولیس کیلئے معمہ بن گئی ہے، اس واقعہ پر علاقہ میں جہاں خوف و ہراس پھیل کر رہ گیا، وہاں کئی ماہ سے شادی شدہ 28سالہ خاتون کا کرائے کے ایک گھر میں اکیلے رہائش پذیر ہونے سے مختلف سوالات نے جنم لیا ہے۔ ایس ایچ او عتیق ڈوگر کا کہنا ہے کہ خاتون اپنے خاوند وقار حیدر کی مرضی سے کرائے کے گھر میں اکیلی رہائش پذیر تھی، وقار حیدر نے خاتون ثمن وقار سے دوسری شادی کر رکھی تھی اور کبھی کبھار اسکے گھر آتا تھا جبکہ ثمن کے گھر میں کاشف نامی شخص کا اکثر آنا جانا تھا ۔ایس ایچ او کے مطابق ثمن وقار کے کمرے سے ملنے والی تصاویر سے اس بات کا اندازہ لگایا گیا ہے کہ خاتون نشہ کرنے کی عادی تھی اور اس کے گھر میں لوگوں کا آنا جانا لگا رہتا تھا ،ایسے لگتا ہے کہ وقوعہ کی رات ثمن کے گھر آنے والے افراد نے کسی نشہ آور چیز کا استعمال کیا ہو اور اس دوران ثمن نے بھی نشہ آور چیز استعمال کی ہو، جس سے اس کی موت واقع ہوئی۔ تاہم ثمن وقار کی لاش 36سے 40گھنٹے پرانی ہے اور منہ اور کانوں سے خون بہہ رہا تھا جس سے اس بات کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ ہلاکت نشہ آور چیز کھانے سے واقع ہوئی ہے۔ تفتیشی افسر سب انسپکٹر علمدار حسین نے بتایا کہ ثمن کی موت کو خودکشی کا واقعہ قرار نہیں دیا جا سکتا، ثمن کے گھر اکثر آنے والے کاشف عرف کاشی کی تلاش شروع کر دی گئی ہے، جبکہ محلے داروں اور ہاﺅسنگ کالونی کے سکیورٹی گارڈز کا کہنا ہے کہ گزشتہ صبح ایک گاڑی پر سوار ہو کر تین افراد ثمن وقار کے گھر آئے اور دروازہ کھلا چھوڑ گئے، جس پر کمرہ سے بدبو آئی۔دوسری جانب پولیس نے خاتون ثمن وقار کی لاش پوسٹ مارٹم کے لئے مردہ خانے جمع کروا دی ہے، انچارج انوےسٹی گیشن انسپکٹر انور چیمہ کا کہنا ہے کہ خاتون کے گھر میں اکثر آنے والے کاشف عرف کاشی اور وقوعہ کے روز آنے والے کار سواروں کا سراغ لگایا جا رہا ہے۔ گاڑی کا نمبر سی سی ٹی وی کیمرہ سے حاصل کر لیا گیا ہے جبکہ خاتون کے ٹیلی فون ڈیٹا سے بھی مدد حاصل کی جائے گی۔ واقعہ کی اصل صورتحال جاننے کیلئے تفتیش شروع کر دی گئی ہے۔ پوسٹ مارٹم کی رپورٹ آنے اور کاشف کاشی سمیت کار سواروں کا سراغ لگنے پر اصل صورتحال سامنے آ جائے گی۔

 

مزید : علاقائی