لاہور ہائیکورٹ نے بوریوالا کی خاتون سے بداخلاقی کے واقعہ کا نوٹس

لاہور ہائیکورٹ نے بوریوالا کی خاتون سے بداخلاقی کے واقعہ کا نوٹس

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائی کورٹ نے بورے والا میں 4 ملزمان کی جانب سے خاتون کو اغواءکرنے اور اسے 25 روز تک بداخلاقی کا نشانہ بنانے کے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج وہاڑی کوشفاف کاروائی اور پولیس کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات کی رپورٹ پیش کرنے کی ہدایات جاری کر دی ہیں۔تفصیلات کے مطابق بورے والا کے چک 261/EB کی رہائشی 35 سالہ خاتون نے میڈیا کو بتایا کہ چار ملزمان نے اس کے گھر میں داخل ہو کر اسے بد اخلاقی کا نشانہ بنایا اور پھر زبردستی اسے اپنے ساتھ لے گئے۔ خاتون نے بتایا کہ 25 دن تک ملزمان نے اسے صادق ٹاﺅن، ڈیرہ جمیل، چیچہ وطنی اور ڈیرہ اظہر کے علاقوں میں قید رکھا اور اسے بد اخلاقی کا نشانہ بناتے رہے۔متاثرہ خاتون نے مزید بتایا کہ ملزمان نے موبائل فون پر اسکی ویڈیو بنا لی اور دھمکیاں دیں کہ اگر اس نے پولیس کو اطلاع دی تو ملزمان اسکے خاوند اور بچوں کو قتل کردیں گے۔متاثرہ خاتون ایک رات ملزمان کی قید سے فرار ہوکر گھر پہنچنے میں کامیاب ہوگئی اور تھانہ صدر بورے والا میں مقدمہ کے اندراج کی درخواست دی۔ پولیس نے نامزد ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرتے ہوئے دو ملزمان کو گرفتار کرلیا جبکہ دو ملزمان نے ضمانت قبل از گرفتاری حاصل کر لی۔ میڈیکل رپورٹ کے مطابق خاتون کے ساتھ اجتماعی بد اخلاقی کی تصدیق ہوگئی ہے جبکہ گرفتار ملزمان کے مطلوبہ نمونے ڈی این اے ٹیسٹ کےلئے لیبارٹری بھجواءدیئے گئے ہیں، تاہم ملزمان کے قبضے سے کوئی ویڈیو برآمد نہیں ہوئی ہے۔ عدالت عالیہ لاہور کے شکایات سیل نے مذکورہ واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج کو واقعہ کی تفصیلی رپورٹ ایک ہفتے میں پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔

نوٹس

مزید : علاقائی