قومی حلقہ 154لودھراں ،انگوٹھوں کے نشانات سے ووٹوں کی تصدیق کرانے کا حکم

قومی حلقہ 154لودھراں ،انگوٹھوں کے نشانات سے ووٹوں کی تصدیق کرانے کا حکم

                            ملتان(نمائندہ خصوصی) الیکشن ٹریبونل ملتان نے لودہراں کے حلقہ این اے 154لودہراں میںانگوٹھوں کے نشانات کے ذریعے ووٹوں کی تصدیق کرانے کا حکم دے دیا ہے ۔الیکشن ٹریبونل کے جج رانا زاہد محمود نے حلقہ این اے 154لودہراں سے امیدوار پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی سیکرٹری جنرل جہانگیر خان ترین کی درخواست پر فیصلہ سنایا ۔ ٹریبونل نے ریٹرننگ اور ڈسٹرکٹ ریٹرننگ افسر لودہراں کو حکم جاری کیا کہ این اے 154لودہراں کے ووٹوں کا تمام ریکارڈ نادرا میں بھیجاجائے اور نادرا 5جون تک انگوٹھوں کے نشانات ے ذریعے ووٹوں کی تصدیق کرکے رپورٹ ٹریبونل میں جمع کرائے ۔کیس کی اگلی سماعت بھی 5جون کو ہوگی ۔الیکشن ٹریبونل ملتان میں آج ہونے والی سماعت کے دوران پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی سیکرٹری جنرل جہانگیر خان ترین اور ان کے وکیل سینئر قانون دان عبدالحفیظ پیرزادہ پیش ہوئے ۔پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے جہانگیر خان ترین نے کہا کہ الیکشن 2013بوگس الیکشن تھے ہماری نظر میں ان الیکشن کا کوئی وجود نہیں ہے ۔انہوں نے کہا کہ این اے 154میں تاریخی دھاندلی ہوئی اور مجھے امید ہے کہ اس حلقے میں حق اور سچ کی کامیابی ہوگی اور ہمیں انصاف ضرور ملے گا۔جہانگیر خان ترین نے کہا کہ میرے مخالف امیدوار اور ان کے وکیل کیس کولٹکانا چاہتے ہیں مگر ہمارے پاس اس الیکشن کے بہت زیادہ ثبوت ہیں ۔پہلے ہی اس کیس میں بہت دیر ہوچکی ہے مگر اب ہم جلد انصاف چاہتے ہیں۔ایک سوال کے جواب میں جہانگیر خان ترین نے کہاکہ حکومت بوکھلاہٹ کا شکار ہوچکی ہے۔کبھی حکومت جیو کی سپورٹ کرتی ہے اور کبھی پیمرا کے ساتھ ہوتی ہے جوکہ حکومت کی بدنیتی کا ثبوت ہے۔عمران خان نے جیو کے خلاف جو ثبوت دیے ہیں ان کا جواب دیا جائے ۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے عوام کو چھوٹے چھوٹے اور غیر اہم مسئلوں میں الجھایا ہوا ہے ۔عوام کے اصل مسائل لوڈشیڈنگ ، مہنگائی اور بے روزگاری کا خاتمہ ہیں جنہیں حل کرنے میں حکومت مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے ۔حکمرانوں کو غیر ملکی دوروں سے فرصت ہی نہیں ہے۔

مزید : صفحہ اول