حکومت اکثریت کے نشے میں ہماری آواز کو دبا رہی ہے،محمود الرشید

حکومت اکثریت کے نشے میں ہماری آواز کو دبا رہی ہے،محمود الرشید

لاہور( سپیشل رپورٹر) پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن جماعتوں نے خبردار کیا ہے کہ ن لیگ قومی اداروں نادرا ، اوگرا،پی سی بی،پیمرا کے اندر ادارے بنا کر انہیں برباد کرنے کے بعد قومی ادارہ فوج کے خلاف سازشوں سے باز رہے۔حزبِ اختلاف کے پارلیمانی لیڈروں کے اجلاس میں اپوزیشن کو ترقیاتی فنڈز نہ دیے جانے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے یہ معاملہ بھر پور طریقے سے ایوان میں اٹھانے کا فیصلہ کیا گیا ۔ اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے قائد حزبِ اختلاف میاں محمود الرشید نے حکومت اپوزیشن کو مسلسل نظر انداز کر رہی ہے اور اسمبلی میں بھی بات کرنے کا موقع نہیں دیا جارہا جبکہ اپوزیشن اراکین اسمبلی کے حلقوں کو نظر انداز کیے جانے پر 3ماہ قبل تحریک استحقاق بھی جمع کروائی جسے ایجنڈے پر نہیں آنے دیا گیا ۔آج تحریک التوئے کار پیش کرنے کی اجازت مانگی مگر اسے بلڈوز کیا گیا جس پر ہم نے احتجاج کا جمہوری حق استعمال کیا ۔ان کا کہنا تھا کہ میٹرو بس کے بے کار منصوبوں پر قوم کے اربوں روپے برباد کرنے والے حکمرانوں نے عوام کو بنیادی سہولتوں سے محروم رکھا ہو اہے بالخصوص اپوزیشن اراکین اسمبلی کے حلقوں میں تعلیم،صحت اور صاف پانی کی فراہمی کے منصوبوں کیلئے بھی فنڈز جاری نہیں کیے۔اسمبلی میں اکثریت کے نشے میں مست حکومت اپوزیشن کی آواز کو دبا رہی ہے ۔جمہوریت اور عوام دشمن رویہ تبدیل کرنے تک متحدہ اپوزیشن احتجاج جاری رکھے گی۔اجماعت اسلامی ،پیپلز پارٹی اور ق لیگ کے اراکین اسمبلی بھی اپوزیشن لیڈر کے موقف اور مطالبات کی حمایت کی ۔میاں محمود الرشید نے کہا کہ وزیر قانون قومی لیڈر شپ پر پھبتیاں کسنے سے بازآجائیں اور ہمیں نام تبدیل کرنے کے خواہش مند شریفوں کا کوئی نام رکھنے پر مجبور نہ کریں ۔ میاں محمود الرشید نے کہا کہ پیمرا کے گزشتہ روز کے فیصلے پر حکومت فی الفور عمل کرے اگر حکومت عمل نہیں کرتی تو اس بات سے ظاہر ہو گا کہ حکومت ہرادارے کے اندر اپنا ادارہ بنانا چاہتی ہے، رانا ثناءاللہ اسٹیبلشمنٹ کی بات کرتے ہیں وہ کھل کر بتائیں کہ ان کا اشارہ کس طرف ہے، وہ تمام اداروں کو متنازعہ بنانے کے بعد اب فوج کے پیچھے کیوں پڑ گئے ہیں۔

مزید : صفحہ اول