38کروڑ کے کرپشن مقدمات خارج کرانے کیلئے درخواستوں پر فیصلہ محفوظ

38کروڑ کے کرپشن مقدمات خارج کرانے کیلئے درخواستوں پر فیصلہ محفوظ

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے 38 کروڑ کے کرپشن مقدمات خارج کرانے کیلئے دائر درخواستوں پر فیصلہ محفوظ کرتے ہوئے قرار دیا ہے کہ محکمہ اینٹی کرپشن 4برسوں میں مقدمات کی تفتیش مکمل کرنے میں ناکام رہا۔جسٹس عباد الرحمن لودھی نے ٹھیکداروں، عزیز اللہ، ہدایت اللہ اور محکمہ تعمیرات کے افسران کی طرف سے دائر اخراج مقدمہ کی درخواستوں کی سماعت کی، عدالتی حکم پر ڈی جی اینٹی کرپشن عابد جاوید ہائیکورٹ میںپیش ہوئے، انہوں نے عدالت کو بتایا کہ محکمہ اینٹی کرپشن نے2010میں جھنگ روڈ کی تعمیر میں 38کروڑ سے زائد کی کرپشن کا مقدمہ درج کیا تھا، مقدمے کا عبوری چالان ٹرائل کورٹ میں جمع کرا دیا گیا ہے، سرکاری وکیل نے کہا کہ چالان جمع ہونے کا بعد ہائیکورٹ کو مقدمہ خارج کرنے کا حکم جاری کرنے کا اختیار نہیں، درخواست گزاروں کے وکیل عابد ساقی نے عدالت کو بتایا کہ محکمہ اینٹی کرپشن نے حتمی چالان عدالت میں جمع نہیں کرایا ، 4برسوں سے مقدمات کی تفتیش مکمل نہیں کی گئی جو محکمے کی بدنیتی ثابت کرتی ہے ، انہوں نے موقف اختیار کیا کہ بدنیتی کی بنیاد پرجمع کرایا گیا عبوری چالان ہائیکورٹ کو مقدمات خارج کرنے سے نہیں روکتا، عدالت نے دلائل سننے کے بعد درخواستوں پر فیصلہ محفوظ کرتے ہوئے قرار دیا کہ محکمہ اینٹی کرپشن چار برسوں میں اس مقدمے کی تفتیش مکمل کرنے میں ناکام رہا۔

مزید : صفحہ آخر