غداری کیس: ایف آئی اے کی تحقیقاتی رپورٹ نامکمل ہیں،وکیل پر ویز مشرف

غداری کیس: ایف آئی اے کی تحقیقاتی رپورٹ نامکمل ہیں،وکیل پر ویز مشرف
غداری کیس: ایف آئی اے کی تحقیقاتی رپورٹ نامکمل ہیں،وکیل پر ویز مشرف

  

 اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )پرویز مشرف غداری کیس میں سیکرٹری داخلہ کا بیان قلمبند نہ ہو سکا،سابق صدر کے وکیل شوکت حیات نے عدالت کے سامنے مو قف اختیار کیا کہ ایف آئی اے کی تحقیقاتی رپورٹ نامکمل ہے،تمام دستاویزات شامل نہیںجس پر خصوصی عدالت نے تمام دستاویزات فراہم کرنے کا حکم دے دیا۔نجی ٹی وی کے مطابق پرویز مشرف غداری کیس میں سیکرٹری داخلہ کا بیان قلمبند نہ ہو سکا،خصوصی عدالت میں پرویز مشرف کے وکیل شوکت حیات نے موقف اپنایا کہ ایف آئی اے کی تحقیقاتی رپورٹ ایسی دستاویزات نہیں جو دفاع کے کام آ سکیں۔انہوں نے درخواست کی کہ تین نومبر کو ہونے والے کابینہ اجلاس میں شریک تمام وزراءو مشیروں، سات نومبر 2007 ءکو ہونے والے قومی اسمبلی اجلاس اور نومبر 2007 ءکے بعد نگران حکومت کے عہدیداران کی تفصیلات طلب کی جائیں۔شوکت حیات ایڈووکیٹ نے کہا کہ ایف آئی اے نے تحقیقاتی رپورٹ میں گواہان کی فہرست شامل نہیں کی۔تحقیقاتی رپورٹ میں 13 مئی 2014 ءکو 24 گواہان کی فہرست شامل کی گئی۔جسٹس فیصل عرب نے کہا کہ سیکرٹری داخلہ روسٹرم پر آئیں تو ان سے براہ راست سوال کر سکتے ہیں۔ سیکرٹری داخلہ سے تمام دستاویزات کا تقاضہ کرنا آپ کا حق ہے۔پراسیکیوٹر اکرم شیخ نے کہا کہ وہ آج بحث نہیں کر سکتے۔اس کے لیے کوئی اور تاریخ مقرر کر دی جائے، اس پر عدالت نے سماعت کل تک ملتوی کر دی۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں