ترکی کان دھماکوں میں یہودی سازش ہے: ترک اخبار

ترکی کان دھماکوں میں یہودی سازش ہے: ترک اخبار
ترکی کان دھماکوں میں یہودی سازش ہے: ترک اخبار

  

استنبول (بیورورپورٹ ) وزیراعظم طیب اردگان کے حامی اخبار نے کوئلے کی کان میں دھماکوں کے سانحہ کو اسرائیلی سازش قرار دیا ہے ۔ انٹرنیشنل بزنس ٹائمز نامی اخبار میں شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق ترکی کے مقامی  اخبار (akit) نے کان میں دھماکے کے بعد طیب اردگان پر ہونے والی تنقید کا رخ یہودیوں  کی طرف موڑ دیا ہے ۔  اخبار کے پہلے صفحہ پر شائع ہونے والے مضمون میں لکھا گیا کہ سوما کان کے مالک الپ گورکن کا داماد دراصل یہودی ہے اور وہ ہی اس سانحہ کا ذمہ دار ہے۔ الپ گورکن کے داماد کا اصل نام ماریو اسافرانا ہے لیکن اس نے تبدیل کرکے اپنا نام ماہیر رکھ لیا ہے۔  اخبار مزید کہتا ہے کہ یہودیوں کی شراکت داری سے چلنے والے ایک مخصوص میڈیا گروپ کو مغربی میڈیا ہدایات جاری کر رہا ہے کہ وہ لوگوں کو کان کنی سانحہ پر طیب اردگان کے خلاف بھڑکائے۔ 2010ءمیں شروع ہونے والا یہ  اخبار دراصل ایک اور اخبار کا وارث ہے، جسے بزور طاقت بند کر دیا گیا تھا۔ واضح رہے کہ طیب اردگان متاثرہ کان کے دورہ کے موقع پر دیئے جانے والے اپنے بیان کی وجہ سے آج کل سخت تنقید کا نشانہ بن رہے ہیں، جس میں انہوں نے کان کنی کے دوران حادثات کو کام کا حصہ قرار دیا۔

مزید : بین الاقوامی