جیو کے خلاف فیصلہ دینے پر پیمرا کے 3 اراکین کو شوکاز نوٹس جاری,حکومت نوٹس بھیجنے کی مجاز نہیں،ارکان پیمرا

جیو کے خلاف فیصلہ دینے پر پیمرا کے 3 اراکین کو شوکاز نوٹس جاری,حکومت نوٹس ...
جیو کے خلاف فیصلہ دینے پر پیمرا کے 3 اراکین کو شوکاز نوٹس جاری,حکومت نوٹس بھیجنے کی مجاز نہیں،ارکان پیمرا

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) حکومت نے جیو کے خلاف فیصلہ دینے پر پیمرا کے 3 پرائیویٹ اراکین کو شوکا ز نوٹس جاری کر دیئے گئے ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق جیو انٹرٹینمٹ پر گستاخانہ پروگرام نشر ہونے کے معاملے پر غیر قانونی اجلاس بلانے اور جیو کے خلاف فیصلہ جاری کر کے نظم و ضبط کی خلاف ورزی کرنے پر میاں شمس، اسرار عباسی اور فریحہ افتخار سے وضاحت طلب کی گئی ہے۔ واضح رہے کہ جیو کے گستاخانہ پروگرام کے معاملے پر پیمرا کا اجلاس بلایا گیا تھا جس میں پیمرا کے 5 پرائیویٹ اراکین اسرار عباسی، میاں شمس الرحمان، مس شمسہ، مس زیبا اور فریحہ افتخار نے شریک ہوئے تھے جبکہ حکومت کا کوئی بھی رکن اجلاس میں شریک نہیں ہوا تھا۔ اس اجلاس میں پانچوں اراکین نے گستاخانہ پروگرام نظر کرنے پر جیو نیوز، جیو تیز اور جیو انٹرٹینمٹ کے لائسنس منسوخ کرنے کافیصلہ سنایا تھا اور کہا تھا کہ فیصلے پر عملدرآمد نہ کیا گیا تو پولیس کی مدد لی جائے گی۔جبکہ پیمرا کے رکن میاں شمس نے حکومتی نوٹس پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ نوٹس خلاف قانون ہے ۔ہم تنخواہ دار ملازم نہیں اسلئے ہمیں نوٹس جاری نہیں کیا جا سکتا ۔ایک نجی چینل سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ چینلز کے متعلق فیصلہ کرنے کا اختیار ارکان کے پاس ہے۔دوسری جانب پیمرا کے دوسرے اسرار عباسی نے بھی میاں شمس کی بات کی تائید کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کے پاس ہمیں نوتس بھیجنے کا کوئی اختیار نہیں ۔ہم نے جیو کے متعلق جو بھی فیصلہ کیا قانون کے مطابق کیا ہے۔

مزید : قومی