عملے کی غفلت سے خاتون نے مردہ بچے کو جنم دیا

عملے کی غفلت سے خاتون نے مردہ بچے کو جنم دیا

نوشہرہ(بیورورپورٹ) نوشہرہ میں لیڈی ڈاکٹر صفیہ شاہد کے نجی ہسپتال میں لیڈی ڈاکٹر اور ہسپتال عملے نے مریضہ کے لواحقین سے زیادہ پیسے بٹورنے کی خاطر حاملہ خاتون کو بچے کی پیدائش میں آسانی کیلئے گرم کیفیت کے انجکشن اور ادویات دینے کی بھرمار کردی جس سے مریضہ کی حالت غیر نجی ہسپتال کی لیڈی ڈاکٹر اور عملے نے حاملہ خاتون کی تشویشناک حالت دیکھ کر اس کو اپنے ہسپتال سے فارغ ہونے کے بہانے دیگر ہسپتال ریفر کرنے کا چیٹ زبردستی لواحقین کو تھما دیا نجی ہسپتال کی لیڈی ڈاکٹر عملے کی غفلت کی وجہ سے حاملہ خاتون نے مردہ بچے کو جنم دے دیا مریضہ کے لواحقین کا نجی ہسپتال کی لیڈی ڈاکٹر عملے کے خلاف زبردست احتجاج صوبائی حکومت سے نوٹس لینے کا مطالبہ تفصیلات کے مطابق نوشہرہ کے علاقہ حکیم آباد کے رہائشی گلزیب نے اپنی حاملہ اہلیہ کو نوشہرہ حکیم آباد میں واقع لیڈی ڈاکٹر صفیہ شاہد کے نجی ہسپتال پر ڈیلیوری کیس کی غرض سے لے گیا نجی ہسپتال میں موجود لیڈی ڈاکٹر نے بچے کی پیدائش میں آسانی اور بچے کی جلدی پیدائش کی خاطر حاملہ خاتون کو گرم کیفیت کے انجکشن اور ادویات دینا شروع کردئیے جس سے حاملہ خاتون کی حالت غیر ہوگئی حاملہ خاتون کی تشویشناک حالت دیکھ کر لیڈی ڈاکٹر صفیہ شاہد کے نجی ہسپتال کے عملے نے مریضہ کو دوسرے ہسپتال ریفر کردیا اور مریضہ کے لواحقین کو زبردستی ریفر چیٹ تھماکر ہسپتال سے باہر نکال دیا متاثرہ حاملہ خاتون نے ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال میں مردہ بچے کو جنم دے دیا اس سلسلے میں ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال کے ذرائع نے بتایا کہ گرم کیفیت کے انجکشن اور ادویات کی وجہ سے بچہ پہلے سے ہی موت کے آغوش میں چلاگیا تھا حاملہ خاتون کے لواحقین نوشہرہ میں لیڈی ڈاکٹر صفیہ شاہد کے نجی ہسپتال کے عملے اور لیڈی ڈاکٹر کے خلاف سراپا احتجاج بن گئے اور زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا اور صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ حکیم آباد نوشہرہ میں لیڈی ڈاکٹر صفیہ شاہد کے نجی ہسپتال اور ان کے عملے کے خلاف ایکشن لے کر کاروائی کریں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر