دنیا کی تیز ترین مرچ ڈریگن بریتھ کی کاشت جو کھانے والے کی جان بھی لے سکتی ہے،برطانوی شیف کادعویٰ

دنیا کی تیز ترین مرچ ڈریگن بریتھ کی کاشت جو کھانے والے کی جان بھی لے سکتی ...

لندن(خصوصی رپورٹ) ایک برطانوی شیف نے دعویٰ کیا ہے کہ اس نے دنیا کی سب سے تیز مرچ کاشت کی ہے جو کھانے والے کو ہلاک بھی کرسکتی ہے۔برطانوی شہری مائیک سمتھ سینٹ کے مطابق انہوں نے کئی برس کے بعد یہ مرچ اگائی ہے جو کھانے والے کو شدید الرجی دے سکتی ہے جسے اینافائیلیکٹک کیفیت کہتے ہیں اس میں جسم میں اینٹھن، خارش اور الٹیاں ہوسکتی ہیں جو جان لیوا بھی ثابت ہوسکتی ہیں۔اپنے نام کی طرح خطرناک ڈریگن بریتھ اب تک دریافت ہونے والی سب سے تیز مرچ ہے جسے طب میں بھی استعمال کیا جاتا ہے۔ اس مرچ کا تیل اگر جلد پر ملا جائے تو وہ جلد کے اسی حصے کو کچھ دیر کے لیے سْن کردیتا ہے اور ڈاکٹر اسے جراحی کے لیے استعمال کرتے ہیں۔مائیک اسمتھ گزشتہ 7 برس سے مرچیاں اور سبزیاں اگا رہے ہیں۔ ڈریگن بریتھ کی شدت کو جب اسکوویلی پیمانے پر ناپا گیا تو وہ 2.48 ایم تھی اور کھانے والے کی سانس میں نالی کو بھی جلاکر اسے موت کے گھاٹ اتار سکتی ہے۔ امریکی افواج مرچوں کے جو اسپرے استعمال کرتی ہے ان کی شدت صرف 2 ایم ہوتی ہے۔ اسمتھ خود مرچ کھانے کے ماہر ہیں لیکن انہوں نے اب تک 10 سیکنڈ سے زیادہ اسے اپنی زبان پر نہیں رکھا کیونکہ یہ زبان پر شدید جلن پیدا کرتی ہے۔

ڈریگن بریتھ

مزید : پشاورصفحہ آخر