فکسنگ کیس: عمر نے ”امین “ ہونے کا ثبوت پیش کر دیا

فکسنگ کیس: عمر نے ”امین “ ہونے کا ثبوت پیش کر دیا

لاہور(ویب ڈیسک) پی ایس ایل فکسنگ کیس میں قومی بلے باز عمر امین نے اپنی بے گناہی کا ثبوت پیش کر دیا، انہوں نے پی سی بی ٹربیونل میں جمع کرائے گئے بیان حلفی میں اعتراف کیا ہے کہ یوسف بکی سے ان کے پرانے روابط ہیں جس نے پی ایس ایل میں 2 ڈاٹ بالز کھیلنے کیلئے 20 لاکھ روپے کی پیشکش کی تھی۔ عمر امین نے اعترافی بیان میں مزید لکھا میں بکی یوسف انور کو 2014 ءسے جانتا ہوں اور رواں سال 5 جنوری کو مجھے یوسف کا واٹس ایپ پیغام موصول ہوا جس میں یوسف نے کہا وہ ایک سود مند کاروباری معاملے پر بات چیت کا خواہشمند ہے۔ یوسف نے یہ بھی پوچھا میں پی ایس ایل 2 کیلئے دبئی کب پہنچوں گا۔ یکم فروری کو یوسف کا پیغام آیا کہ وہ 5 فروری کو دبئی پہنچ جائے گا اور 6 کو ملاقات ہو گی، دبئی پہنچنے کے بعد 6 فروری کو ہم شیخ زید روڈ پر ایک ریسٹورنٹ میں ملے۔ ملاقات میں یوسف نے مجھے سپاٹ فکنگ کی پیشکش کی جس کے مطابق مجھے پہلا اوور چھوڑ کر 2 ڈاٹ بالز کھیلنے کے بدلے 20 لاکھ روپے ملنے تھے۔ حامی بھر نے پر مخصوص بیٹ گرپس اور بینڈز مجھے پہننے تھے۔ عمرامین نے اپنے بیان حلفی میں مزید لکھا کہ یوسف کی آفر نے یکسر مسترد کر دی اور سرفراز سے مشاورت کے بعد کرنل (ر) اعظم کو ملاقات کا میسج کر دیا اور 8 فروری کو انہیں تمام تفصیلات سے آگاہ کیا۔

مزید : کھیل