چوک پرمٹ ،12سے زائد افراد کا پاسکو سنٹر پر حملہ ،ریکارڈ نذر آتش ،2چوکیدار زخمی

چوک پرمٹ ،12سے زائد افراد کا پاسکو سنٹر پر حملہ ،ریکارڈ نذر آتش ،2چوکیدار زخمی

  

چوک پرمٹ‘ہیڈ پنجند(نمائندہ پاکستان) چوک پرمٹ؛ایک درجن سے زائدمسلح افراد نے پاسکو سنٹر فتح پورپر لاٹھیوں سوٹوں سے حملہ کر دیا‘2چوکیدار شدید زخمی ہو گئے ‘پاسکو سنٹر کے ریکارڈ کو بھی آگ لگا دی ۔ تفصیل کے مطابق پاسکوسنٹر فتح پور کے چوکیدار الطاف حسین ولد عبدالرحمٰن اور صادر حسین ولد عبدالرزاق اپنی ڈیوٹی پر موجود تھے کہ کہ رات ایک ڈیڑھ بجے حافظ شفیق الرحمٰن ،حافظ سیف الرحمٰن پسران کریم بخش،عارف،طارق ،آصف پسران عبدالغفار ، عبدالغفار ولد اللہ ڈتہ اور6/7نامعلوم ملزمان اقوام چاچڑ مسلح ہائے لاٹھیاں سوٹے آگئے اور آتے ہی دونوں چوکیداروں کی پکڑکر لاٹھیوں سوٹوں سے مار مار کر (بقیہ نمبر31صفحہ7پر )

ادھ موا کرڈالاجس پر صادر حسین کی ٹانگ میں فریکچراور الطاف حسین کو سر پر اور جسم پر شدید چوٹیں آئیں اور پاسکو سنٹر کے ریکارڈ بھی نذر آتش کرڈالا علاوہ ازیں ملزمان نے دھمکیاں دیں کہ اگر کاروائی کرائی تو پاسکو سنٹر فتح پور کو آگ لگادیں گے علاوہ ازیں ملزمان نے سنٹر ہذا پر ریکارڈ کو بھی آگ لگا دالی جتوئی پولیس نے انچارج پاسکو سنٹر فتح پور راﺅ محمد عثمان کی رپورٹ پر مقدمہ درج کرکے دو ملزمان حافظ شفیق الرحٰمن اور حافظ سیف اللہ کو گرفتار کرلیا جبکہ دیگر کی گرفتاری کےلئے پولیس چھاپے ماررہی ہے زخمیوں کو ٹی ایچ کیو ہسپتال جتوئی میں داخل کردیا جہاں انکی حالت انتہائی تشویشناک بیان کی جاتی ہے رابطہ پر پولیس آفیسر نے بتایا کہ ہم میرٹ پر کاروائی کریں گے کو ئی گنہگار کاروائی سے نہ بچ پائے گا۔ اوچ شریف کے نواحی علاقے بن والہ کے کاشتکار ملک اجمل للو کی قیادت میں کاشتکاروں نے احتجاج کرتے ہوئے بتایا فورڈ سنٹر ہیڈ پنجند میں کاشتکاروں کو زلیل و خوار کیا جا رہا ہے بیوپاری کی گندم کو رشوت لینے پر پاس کر لیا جاتا اور کاشتکار کی گندم کو اعتراض لگا دیا جاتا جس کی وجہ سے کاشتکار اعتراض لگنے والی گندم بیوپاری کو کم ریٹ پر دینے پر مجبور ہیں جو کاشتکار کی اعتراض لگنے والی گندم بیوپاری خرید لے وہی پاس کر لی جاتی ہےاورکٹوتی کے نام پر بھی بھتہ خوری کی جا رہی ہے بوریاں دینے پر بھی کرپشن کی گئی ہے انہوں نے بتایا فورڈ سنٹر کے انسپکٹر ناصر وڑائچ کی بار بار منت سماجت کے باوجود کاشتکاروں کی کوئی شنوائی نہیں ہوتی انہوں نے ڈی سی بہاولپور سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

دھاوا

مزید :

ملتان صفحہ آخر -