ملتان ،ایڈز مریضوں کی تعداد بڑھنے کا انکشاف خوفناک اعدادو لوگوں میں خوف

ملتان ،ایڈز مریضوں کی تعداد بڑھنے کا انکشاف خوفناک اعدادو لوگوں میں خوف

  

ملتان( وقا ئع نگار ) خطرناک وائرس ایچ آئی وی (ایڈز )نے شہر اولیاء اور گردنواح کے باسیوں کو بہت نقصان پہنچایا ہے۔ اور درجنوں افراد اس خوفناک مرض سے متاثر ہوئے ہیں۔جس کے باعث ملتان شہر اور اسکے اردگرد کے علاقے سے آنے والے مریضوں میں ایڈز کے مرض کے خوف ناک اعداد و شمار سامنے آئے ہیں۔جبکہ دو سال کے دوران سینکڑوں شہری ایچ آئی.وی.ایڈز میں مبتلا ہوئے ہیں۔ مجموعی طور پر اب تک ایک ہزار دو سو چونتیس متاثرہ شہری ایڈز کنٹرول پروگرام میں رجسٹر ہو چکے ہیں (بقیہ نمبر33صفحہ7پر )

جبکہ ایڈز کنٹرول پروگرام کے تحت رجسٹر ہونےوالےاور ایچ ائی وی ایڈز میں مبتلا ہونے.والی.خواتین کی.تعداد 146 ہے۔اسی طرح ایڈز سے متاثرہ ٹرانس جینڈز بھی اس کی زد میں ہیں اور اب تک 24 ٹرانس جندر ایدز سے متاثر ہو کر ایڈز کنٹرول پروگرام میں رجسٹر ہوئے ہیں۔واضح رہے ایڈز مرض انہی دو سالوں کے دوران سے متاثرہ مردوں کی تعداد سب سے زیادہ رہی ہے۔دو سال میں 1063 مرد ایچ ایی وی ایڈز سے متاثر ہوکر رجسٹر ہوئے،جبکہ اب تک ایک بچہ میں بھی ایڈز کیتصدیق ہوچکی ہے،اگر وجوہات کی بات کی جائے تو 1234 افراد میں سے 750 افراد نشہ کے باعث ایچ آیی.وی.ایڈز میں مبتلا ہوئے جس کی بڑی وجہ سرنج کا بار بار استعمال ہے،اس کے ساتھ ساتھ 357 افراد بے راہ روی کے باعث ایڈز میں مبتلا ہویےاور 109 افراد غلط انتقال خون کے باعث ایڈز میں مبتلا ہو چکے.ہیں جبکے اس خطرناک مرض کو پھیلانے میں اتائی بھی پیش پیش رہے کیونکہ 18 افراد اتائیت کے باعث ایڈز میں مبتلا ہو چکے ہیں،،اس حوالے سے ڈسٹرکٹ شہباز شریف ہسپتال ڈاکٹر راو امجد کا کہنا ہے کے احتیاطی.تدابیر کا.اختیاط کرنا ضروری ہے،سرنج کا استعمال،غلط طریقہ انتقال خون استعمال.شدہ بلیڈ،عطائیت بڑی وجہ ہیں ایڈز کے پھیلاو کی۔ جبکے اس حوالے سے سکریننگ کرائی جارہی ہے۔ 

ایڈز

مزید :

ملتان صفحہ آخر -