ہم نے اپنی مرضی سے شادی کی ‘ چائینز شوہروں  پر پورا اعتماد ‘ مسیحی لڑکیوں کی میڈیا سے گفتگو

ہم نے اپنی مرضی سے شادی کی ‘ چائینز شوہروں  پر پورا اعتماد ‘ مسیحی لڑکیوں کی ...

  

ملتان(خبرنگار خصوصی)ہائیکورٹ ملتان بینچ کے جسٹس رسال حسن سید نے ڈی پی او خانیوال اور ڈائریکٹر ایف آئی اے کو خانیوال کی رہائشی مسیح لڑکیوں کو چائینیز لڑکوں کیساتھ پسند کی شادی کرنے پر ہراساں و پریشان کرنے سے باز رہنے اور(بقیہ نمبر23صفحہ12پر )

 اپنی آئینی حدود میں رہ کر فرائض کی ادائیگی کا حکم دیا ہے۔ فاضل عدالت میں مسیح لڑکیوں لائبہ اور سونا سرفراز نے درخواست دائر کی تھی کہ لائبہ نے ما فاکیوانگ سے 12مارچ اور سونا سرفراز نے زہینگ ینکوا سے 28مارچ کو مسیحی رواج کے مطابق چرچ میں شادی کی تھی۔ اب وہ دونوں خاندان کی رضامندی سے اپنے چائنیز شوہروں کے ساتھ چائنا جانا چاہتی ہیں جبکہ ایف آئی اے اور پولیس تھانہ صدر میاں چنوں چائنا جانے سے روکتے ہوئے ان پر طلاق کے لئے دباﺅڈال رہے ہیں لہٰذا پولیس کو اپنی آئینی حدود میں رہنے کا حکم دیتے ہوئے انہیں اپنی مرضی سے چائنا جانے کی اجازت دی جائے۔ اس موقع پر لڑکیوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے اپنی مرضی سے محبت کی شادی کی ہے۔ پولیس ہمیں چائینہ جانے سے کیسے روک سکتی تھی۔ ہمیں اپنے چائینیز خاوندوں پر پورا اعتماد ہے۔ آج عدالت نے جو فیصلہ دیا وہ ہمارے لئے خوش آئند ہے۔ ہم چائنہ جانا چاہتی ہیں اور وہاں جاکر باقی زندگی ہنسی خوشی گزارنا چاہتی تھیں جو اب ممکن ہوسکے گا۔

اعتماد

مزید :

ملتان صفحہ آخر -