13سو فنکار اور تکنیک کار آرٹسٹ سپورٹ فنڈ کی مالی امداد سے محروم

13سو فنکار اور تکنیک کار آرٹسٹ سپورٹ فنڈ کی مالی امداد سے محروم

  

لاہور(فلم رپورٹر)13سو سے زائد فنکار اور تکنیک کار رواں سال صوبائی حکومت کے زیر انتظام چلنے والے آرٹسٹ سپورٹ فنڈ سے ملنی والی مالی امداد سے محروم اس سال گلوکارہ ترنم ناز،شوکت علی ،ماسٹر امین،ہیر سنگھار،الطاف حسین اور پرویز کلیم سمیت 26 لوگوں کو حکومت کی جانب سے چیک جاری کئے گئے ہیںجبکہ باقی فنکاروں کو ابھی تک صرف تسلی کے سوا کچھ نہیں ملا ہے۔گزشتہ برس سابق وزیر اعلیٰ میاں محمد شہباز شریف نے مالی سال 2017ءاور2018ءکے بجٹ میں فنکاروں اور تکنیک کاروں کی فلاح و بہبود کے لئے 8کروڑ روپے مختص کئے تھے جس میں سے جون 2018ءمیں 13سو فنکاروں کو 60ہزار روپے فی کس ادا کئے گئے تھے اب پورا سال گذرنے کے باوجودفنکاروں کی اکثریت مالی امداد کی منتظر ہے۔

اور ان کو دور دور تک امداد ملنے کا کوئی امکان نہیں ہے یاد رہے کہ کچھ عرصہ قبل لاہور پریس کلب کے باہر چمٹے بجا کر احتجاج کیا تھا لیکن اس کے احتجاج کے باوجود کسی قسم کی کوئی شنوائی نہیں ہوئی ۔مالی امداد سے محروم فنکاروں نے وزیر اعظم عمران خان کو وہ وعدہ یاد کروایا ہے کہ اگر میں اقتدار میں آگیا تو خیبر پختون خواہ کے فنکاروں کی طرح پنجاب میں بھی فنکاروں کو 30ہزار روپے ماہانہ وظیفہ دیا کروں گا ریڈیو پاکستان ،پی ٹی وی اور دوسرے اداروں میں فنکاروں اور موسیقاروں کو کوئی کام نہیں مل رہا جس کی وجہ سے ان کے گھروں کے چولہے ٹھنڈے پڑ گئے ہیں موجودہ حکومت نے فنکاروں کا معاشی قتل کرنے کے لئے پاکستان کے بھر کے متعدد ریڈیو سٹیشن بند کردیئے ہیں ان حالات میںفنکاروں کی حالت بد سے بدتر ہورہی ہے۔فنکاروں نے وزیر اعظم عمران خان سے اپیل کی ہے کہ وہ فوری طور پر اس معاملہ پر نظر کرتے ہوئے وظائف اور مالی امداد کا سلسلہ بحال کریں تاکہ بے روزگار فنکار بھی اپنی زندگی کی گاڑی چلانے کے قابل ہوسکیں۔

مزید :

کلچر -