کوشش ہے آصف زرداری کیخلاف کیسزتاخیر کا شکار نہ ہوں، شہزاد اکبر

  کوشش ہے آصف زرداری کیخلاف کیسزتاخیر کا شکار نہ ہوں، شہزاد اکبر

  

اسلام آباد ( مانےٹر نگ ڈےسک) وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب بیرسٹر شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ ماضی میں سابق صدر آصف علی زرداری کیخلاف کیسز لٹکائے گئے تھے، اب ہماری کوشش ہے کہ ان میں تاخیر نہ ہو۔دنیا نیوز کے پروگرام ”دنیا کامران خان کیساتھ“ میں گفتگو کرتے ہوئے بیرسٹر شہزاد اکبر نے کہا کہ سابق صدر آصف زرداری کے کیسز لٹکائے گئے تھے، انہوں نے کیسز میں تاخیر کا فائدہ اٹھایا۔ ہماری کوشش ہے اب ان کے کیسز تاخیر کا شکار نہ ہوں۔ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ لاہور ہائیکورٹ میں کافی ججز کی سیٹیں خالی ہیں۔ ججز کی تقرری کی تجاویز جوڈیشری کی طرف سے آتی ہیں۔ حکومت نے جوڈیشری کی تجاویز پر ہی جج لگانے ہوتے ہیں۔ ہماری کوشش ہے ججز کی تعداد کو بڑھایا جائے۔بیرسٹر شہزاد اکبر نے کہا کہ نیب کورٹ بھی ازخود سپیشل کورٹ ہے۔ قانون یہ کہتا ہے کہ فیصلہ تیس دن کے اندر ہونا چاہیے۔ نیب آزاد ادارہ کیسز کی رفتار کا تعین چیئرمین نیب نے کرنا ہے۔نیب میں انویسٹی گیشن کا طریقہ کار بہتر ہونا چاہیے۔ پراسیکیوشن کے مرحلے میں کافی تبدیلیاں کی ہیں۔ نیب انویسٹی گیشن کے لیے ماہرین کی خدمات حاصل کر سکتا ہے۔ بہتر انویسٹی گیشن ہی پراسیکیوشن کی جانب جائے گی۔

شہزاد اکبر

مزید :

صفحہ آخر -