چیئرمین نیب کا انٹرویو قانون کی خلاف ورزی ایکشن لیا جائے، زرداری

  چیئرمین نیب کا انٹرویو قانون کی خلاف ورزی ایکشن لیا جائے، زرداری

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں) اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق صدر آصف زرداری کی 2لاکھ روپے کے مچلکوں کے عوض13جون تک عبوری ضمانت منظورکر لی،یہ آصف زرداری کی آٹھویں کیس میں عبوری ضمانت ہے، آصف زرداری سات مختلف کیسز میں پہلے ہی عبوری ضمانت پر ہیں۔ادھر سابق صدر آصف علی زرداری نے چیئرمین نیب کیخلاف کارروائی کا مطالبہ کر دیا۔سابق صدر آصف علی زرداری نے احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ انٹرویو دیکر چیئرمین نیب نے قوانین کی خلاف ورزی کی، چیئرمین نیب کےخلاف ایکشن لیا جائے۔ انہوں نے کہا بزرگوں کو ہتھکڑیاں لگانے اور جیلوں میں ڈالنے کے بعد معیشت کیسے چل سکتی ہے۔ادھر اسلام آباد احتساب عدالت میں آصف علی زرداری اور فریال تالپور پر جعلی بینک اکاو¿نٹس کیس میں فرد جرم عائد کرنے کی تاریخ مقرر نہ ہو سکی۔اسلام آباد کی احتساب عدالت کے جج محمد ارشد ملک نے کیس کی سماعت کی۔آصف زرداری اور فریال تالپور آج احتساب عدالت میں پانچویں مرتبہ پیش ہوئے۔ احتساب عدالت میں جعلی بینک اکاو¿نٹس کیس میں ملزمان کو آج بھی ریفرنس کی نقول فراہم نہیں کی جا سکیں اور عدالت نے سماعت 30 مئی تک ملتوی کر دی۔ملزمان عبدالغنی مجید اور انور مجید کو پیش نہ کرنے پر عدالت نے چیف سیکرٹری سندھ اور سپرنٹنڈنٹ جیل کو شوکاز نوٹس جاری کر دیا۔دوسری جانب نیب نے جعلی اکاو¿نٹس کیس میں سابق صدر آصف علی زرداری کو سندھ حکومت کے غیر قانونی ٹھیکوں کی انکوائری میں 23 مئی کو طلب کر لیا۔ نیب کی جانب سے آصف زرداری کو دیئے گئے نوٹس میں کہا گیا ہے کہ غیر قانونی ٹھیکوں سے نوڈیرو ہاو¿س کے انچارج ندیم بھٹو کے اکاو¿نٹ میں رقوم منتقل ہوئیں۔نوٹس میں کہا گیا کہ ایک کروڑ 70 لاکھ روپے سے نوڈیرو ہاو¿س کے انتظامات چلائے گئے، آپ کے اور اہل خانہ کے فضائی اخراجات بھی اسی رقم سے منتقل ہوئے، آپ اہم معلومات رکھتے ہیں، پیش ہو کر جواب دیں۔ یاد رہے نیب آصف زرداری کو 7 انکوائریز میں پہلے طلب کر رکھاہے۔دوسری طرف احتساب عدالت نے جعلی اکاﺅنٹس کیس کی سماعت کے دور ان حسین لوائی اور طحہ رضا کی ضمانت کی درخواست مسترد کر تے ہوئے ہتھکڑیاں لگا کر ملزمان کو پیش کرنے پر جیل حکام کو نوٹس جاری کر کے جواب طلب کر لیا ہے ۔

زرداری

مزید :

صفحہ اول -