فیصل آباد : فنڈزکمی کا بہانہ ، 650واساملازمین فارغ ، 9لاکھ روپے ماہانہ تنخواہ پر کنسلٹنٹ بھرتی

فیصل آباد : فنڈزکمی کا بہانہ ، 650واساملازمین فارغ ، 9لاکھ روپے ماہانہ تنخواہ ...

  

فیصل آباد(سپیشل رپورٹر)واسا فیصل آباد نے فنڈز کی کمی کو جواز بنا کر سالہا سال سے ہر تین ماہ بعد ایک روزکاگیپ ڈال کر ورک چارج کے طور پر کام کرنے والے 650ملازمین کو بغیر کسی نوٹس کے ملازمت سے فارغ کر دیا گیا جبکہ ڈیوٹی ادا کرنے کے باوجود انہیں دو دو ماہ کی تنخواہیں بھی نہیں دی گئیں۔ دوسری طرف کئی سال سے ریٹائرڈ ہونے والے ایک ڈائریکٹر کو 9لاکھ روپے پر چھ ماہ کیلئے کنسلٹنٹ ڈی سلٹنگ ملازم رکھنے کا انکشاف بھی ہوا ہے ان ملازمین کی برطرفی سے واسا کی کارکردگی پر انتہائی منفی اثرات مرتب ہو سکتے ہیں جس سے شہریوں کو شدیدمشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا۔ ذرائع کے مطابق ڈی سلٹنگ کے لئے ایک باقاعدہ شعبہ موجود ہے جہاں ڈائریکٹر ‘ڈپٹی ڈائریکٹر‘ انجینئرز‘ سب انجینئرز اور دیگر کافی سٹاف موجود ہے۔ 650ملازمین کی اچانک برطرفی سے سینکڑوں گھرانوں کا روزگار متاثر ہوا ہے جس کی تمام تر ذمہ داری ایم ڈی واسا پر عائد ہوتی ہے جن کو ن لیگ کے دور اقتدار میں آﺅٹ آف ٹرن ایم ڈی تعینات کیا گیا تھا حالانکہ ان سے چار سینئر افسران بھی حاضر سروس موجود تھے برطرف شدہ سینکڑوں ورک چارج ملازمین ایسے بھی ہیں جو آٹھ آٹھ دس دس سال سے اس طرح ڈیوٹی کر رہے تھے کہ ہر 85روز کے بعد ایک روز کا گیپ ڈال کر انہیں دوبارہ ملازم رکھ لیا جاتا تھا حالانکہ سپریم کورٹ کی اس سلسلے میں رولنگ بھی موجود ہے کہ جو ملازم چار سال سے ورک چارج کے طور پر کام کر رہا ہے اسے ریگولر کر دیا جانا چاہیے لیکن یہاں ان سب احکامات اور موجودہ حکومت کی ترجیحات کے خلاف برطرفیاں کر کے موجودہ حکومت کے خلاف فضا پیدا کی جا رہی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ یہ فضا عید کے بعد اپوزیشن کے احتجاج کے حق میں استوار کی جا رہی ہے۔

واساملازمین فارغ

مزید :

علاقائی -