جندول میں ڈاکٹروں کا احتجاج جاری،مریضوں کو پریشانی

  جندول میں ڈاکٹروں کا احتجاج جاری،مریضوں کو پریشانی

  

جندول (نمائندہ پاکستان) جندول صوبہ خیبر پختونخواہ کے دیگر علاقوں کی طرح ضلع دیر لوئر سمیت جندول میں بھی ڈاکٹروں کا احتجاج جاری،سرکاری ڈیوٹیاں ترک کر کے ڈاکٹر پرائیویٹ پریکٹس کر رہے ہیں جس سے ڈاکٹروں کے ساکھ کو شدید نقصان پہنچ رہا ہے، سوشل میڈیا ایکٹیوسٹس اور ڈاکٹر سوشل میڈیا پر آمنے سامنے۔مسئلہ کا جلد از جلد حل نہ نکلا تو عوام اور ڈاکٹروں کے مابین کشیدگی پیدا ہو سکتی ہے۔تفصیلات کے مطابق وزیر صحت اور سینئر ڈاکٹر کے مابین تنازعہ کی وجہ سے ڈاکٹروں نے احتجاج کا آغاز کر دیا ہے مگر ڈاکٹرہسپتالوں میں سرکاری ڈیوٹیاں ترک کر کے سرکاری وقت میں کھلے عام نجی پریکٹس کر رہے ہیں جس کی وجہ سے عوام انہیں شدید تنقید کا نشانہ بنا یا جا رہاں ہیں۔ادھر ڈاکٹر برادری میں ایسے لوگ موجود ہیں جو بائیکاٹ کے باوجود پرائیویٹ پریکٹس کرنے والے ڈاکٹروں کے حق میں نہیں۔ ڈاکٹروں کی جانب سے شروع کر دہ احتجاج کی وجہ سے سوشل میڈیاں ایکٹیوسٹس اور ڈاکٹرز آمنے سامنے آگئیں ہیں جسکی وجہ سے ماحول کافی خراب ہو چکا ہے۔عوامی حلقے بھی ڈاکٹروں کے عجیب و غریب احتجاج پر بھی سوالات اٹھائے رہے ہیں اور احتجاج کو ڈیوٹی سے غفلت سمجھ رہے ہیں۔ عوامی حلقوں کے مطابق اگر ڈاکٹروں کو احتجاج کرنا ہے تو ہر سطح پر کریں۔اگر مذکورہ معاملہ کا جلد از جلد نتیجہ نہ نکالا گیا تو عوام اور ڈاکٹرز کی مابین تنازعات پیدا ہونگے جس میں حکومت کو نقصان سمیت وائٹ کورٹ کو بھی شدید نقصان پہنچے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -