جنرل ہسپتال کے 18ڈاکٹر کورونا کا شکار،آرتھوپیڈک وارڈ بند

جنرل ہسپتال کے 18ڈاکٹر کورونا کا شکار،آرتھوپیڈک وارڈ بند

  

لاہور (جنرل رپورٹر) لاہورکے جنرل ہسپتال میں آرتھوپیڈک وارڈ کے 18 ڈاکٹرز کورونا سے متاثر ہوگئے جس کے بعد ایم ایس جنرل ہسپتال نے ابتدائی طور پرآرتھوپیڈک وارڈ کو تین روز کے لیے بند کردیا۔نجی ٹی وی کے مطابق آرتھوپیڈک وارڈ کے 18 ڈاکٹروں کے کورونا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد آرتھوپیڈک وارڈکے سربراہ نے پرنسپل کو خط لکھا ہے جس میں کہا گیا کہ وارڈ کے باقی ڈاکٹروں کو کورنٹائن کردیا گیا ہے اس لیے آرتھوپیڈک وارڈ کو 10 روز کے لیے بند کردیا جائے۔ایم ایس جنرل ہسپتال محمود طارق کا کہنا ہے کہ بڑی تعداد میں کیسز سامنے آنے پرابتدائی طور پر وارڈ کو 3 دن کیلئے بند کرکے ڈس انفیکٹ کیاجارہا ہے۔ہسپتال ذرائع کے مطابق انسٹی ٹیوٹ آف نیورو سائنس کے 3 ڈاکٹروں اور 2 نرسزکا بھی کورونا ٹیسٹ مثبت آیا ہے۔علاوہ ازیں کورونا کے580 مریضوں نے گھرمیں قرنطینہ کیلئے درخواست دیدی، سب سے زیادہ 315 مریض ایکسپو سنٹر فیلڈ ہسپتال سے گھر جانے کیلئے بے تاب ہیں۔ذرائع کے مطابق پنجاب حکومت کی جانب سے کورونا کے مریضوں کو گھروں پر آئسولیشن میں رہنے کی اجازت دینے کے بعد پہلے سے ہسپتالوں میں زیرعلاج مریضوں کو بھی گھرمنتقل ہونے کا مشورہ دیا جارہا ہے، میو ہسپتال سے بھی کورونا کے زیرعلاج 224 مریض گھر میں آئسولیشن میں رہنے کے خواہاں ہیں۔ ضلعی انتظامیہ نے اب تک 39 مریضوں کو ہوم آئسولیشن کی اجازت دی ہے، شہر کے سرکاری اور پرائیویٹ ہسپتالوں میں اس وقت 877 مریض زیرعلاج ہیں جن میں سے 52 کو انتہائی نگہداشت وارڈ میں ر کھاگیاہے، تشویشناک حالت کے باعث 16 مریضوں کو وینٹی لیٹرز کے ذریعے مصنوعی تنفس فراہم کیا جارہا ہے۔دوسری جانب ترجمان محکمہ صحت نے عوام سے اپیل کی ہے کہ حفاظتی تدابیر اختیار کرکے خود کو محفوظ بنائیں، بیرون ممالک سے آئے افراد میں آئسولیشن کے دوران علامات ظاہر ہوں تو 1033 پر رابطہ کریں۔

ڈاکٹر کورونا کا شکار

مزید :

صفحہ آخر -