عید کی شاپنگ کیلئے بازاروں میں رش،ایس او پیز نظر انداز،کورونا سے مزید 35افراد جاں بحق، 1541نئے کیسز دنیا بھر میں اموات 3لاکھ 30ہزار تک پہنچ گئیں

  عید کی شاپنگ کیلئے بازاروں میں رش،ایس او پیز نظر انداز،کورونا سے مزید ...

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) لاک ڈاؤن میں نرمی کے بعد عید شاپنگ کیلئے بازاروں میں رش بڑھ گیا، شہریوں کی بڑی تعداد عید بازاروں میں امڈ آئی، مختلف شہروں میں عوام کی جانب سے ایس او پیز پر عمل نہیں کیا جا رہا۔لاہور کے بازاروں میں بھی عید کی گہما گہمی عروج پر ہے، سماجی فاصلے کا کسی کو خیال نہیں، شہر کا کوئی بازار بھی ایسا نہیں جہاں کھڑکی توڑ رش نہ ہو، فیصل آباد میں مارکیٹوں اور بازاروں میں عید شاپنگ جاری رہی۔شہریوں نے کورونا وائرس سے بچاؤ کیلئے بنائے گئے ایس او پیز کو ہوا میں اْڑا دیا گیا جس سے کورونا کے پھیلاؤ کا خدشہ بڑھ گیا۔ملتان کے چھوٹے بڑے بازاروں میں انتہا کا رش ہے، عوام نے غیر سنجیدگی کی انتہا کر دی۔ جوں جوں عید قریب آ رہی ہے، پشاور کی مارکیٹوں میں بھی شہریوں کی بھرمار ہے، ایس او پیز نظر اندار کئے جا رہے ہیں۔لاک ڈاؤن میں نرمی کے باعث ملک کے دیگر شہروں اور بازاروں میں ایس او پیز پر عملدرآمد نہ ہونے کے برابر ہے جس سے کورونا کے پھیلنے کا خدشہ ہے۔لاہور سمیت پنجاب کے مختلف علاقوں میں ٹرانسپورٹ چل پڑی زائد کرایوں نے مسافروں کو پریشان کر دیا۔لاہور کے لاری اڈے پر بھی بسیں منز ل کی جانب روانہ ہونے لگیں، شہریوں کی اپنے آبائی علاقوں کو واپسی جاری ہے، شہر میں اڈون پر چہل پہل ہے، من مانے کرائے کی وصولی پر مسافر پریشان ہیں۔فیصل آباد سے بھی پبلک ٹرانسپورٹ دوسرے شہروں کو رواں دواں ہے، اڈوں پر ایس او پیز پر عمل درآمد کو یقینی نہیں بنایا جا رہا، شہری گھروں کو واپسی پر خوش ہیں۔ ملتان میں بھی بس ٹرمینلز پر گہما گہمی شروع ہوگئی،، زائد کرائے وصول کئے جا رہے ہیں۔پشاور سے بھی دوسرے شہروں کے لئے پبلک ٹرانسپورٹ رواں دواں ہے، ایس او پیز پر عملدرآمد نہ ہونے کے برابر ہے۔ اسلام آباد میں فیض آباد بس اڈے پر مسافروں کا رش ہے، تاہم کرایوں میں اضافے سے شہری پریشان ہیں۔سندھ میں پبلک ٹرانسپورٹ اوپن نہ ہوسکی، بلوچستان حکومت نے بھی پبلک ٹرانسپورٹ تاحال نا کھولنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ترجمان صوبائی حکومت کا کہنا ہے عوام کی زندگی عزیز ہے، ٹرانسپورٹ کھلنے سے کورنا وائرس کے پھیلاؤ کا خطرہ ہے۔دوسری طرفحکومت پنجاب نے عید تک شاپنگ مالز اور مارکیٹوں کے کھلنے کا دورانیہ بڑھادیا۔وزیر تجارت پنجاب میاں اسلم اقبال نے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی منظوری کے بعد کاروبار کھولنے کے اوقات میں اضافے کا باضابطہ اعلان کردیا۔میاں اقبال اسلم نے بتایا کہ اب شاپنگ مالز کے اوقات کار شام 5 بجے سے بڑھا کر رات 10 بجے تک کریے گئے ہیں، بازار اور مارکٹیں بھی عید تک رات دس بجے تک کاروبارکرسکیں گی۔وزیر تجارت پنجاب نے مزید کہا کہ کل سے صوبے بھرمیں مزارات بھی کھول دیئے جائیں گے، مزارات پر مذکورہ اوقات کار کا اطلاق نہیں ہوگا۔

خریداری رش

اسلام آباد، کراچی، پشاور، لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)ملک بھر میں کورونا سے مزید 34 افتراد ہلاک ہو گئے جبکہ، 1412 نئے کیسز رپورٹ ہوئے اموات کی مجموعی تعداد 1051 ہو گئی جب کہ نئے کیسز سامنے آنے کے بعد مریضوں کی تعداد 49391 تک پہنچ گئی ہے اب تک سب سے زیادہ اموات خیبرپختونخوا میں سامنے آئی ہیں جہاں کورونا سے 365 افراد انتقال کرچکے ہیں جب کہ سندھ میں 336 اور پنجاب میں 297 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔اس کے علاوہ بلوچستان میں 38، اسلام آباد 10، گلگت بلتستان میں 4 اور آزاد کشمیر میں مہلک وائرس سے ایک شخص جاں بحق ہوا ہے۔جمعرات کے روزملک بھر سے کورونا کے مزید 1412 کیسز اور 34 ہلاکتیں سامنے آئیں جن میں سندھ سے 960 کیسز 20 ہلاکتیں، خیبر پختونخوا سے 340 کیسز 14 ہلاکتیں، اسلام آباد 97 اور آزاد کشمیر سے 15 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔بروز جمعرات سندھ میں کورونا وائرس کے مزید 960 کیسز سامنے آئے اور 20 ہلاکتیں ہوئیں جن کی تصدیق وزیراعلیٰ سندھ نے کی۔مرد علی شاہ نے بتایا کہ صوبے میں نئے کیسز کے بعد کورونا کے مریضوں کی مجموعی تعداد 19924 اور ہلاکتیں 336 ہوگئی ہیں۔وزیراعلیٰ کے مطابق مزید 680 مریض صحتیاب ہوگئے جس کے بعد صحتیاب ہونے والوں کی تعداد 6325 ہوگئی ہے۔وفاقی دارالحکومت سے کورونا وائرس کے مزید 97 کیسز سامنے آئے ہیں جو سرکاری پورٹل پر رپورٹ کیے گئے ہیں۔پورٹل کے مطابق اسلام آباد میں کیسز کی مجموعی تعداد 1235 ہوگئی ہے جب کہ 10 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔اسلام آباد میں اب تک کورونا وائرس سے 151 مریض صحتیاب بھی ہوئے ہیں۔آزاد کشمیر سیکورنا کے مزید 15 کیسز سامنے آئے ہیں جو سرکاری پورٹل پر رپورٹ ہوئے ہیں۔پورٹل کے مطابق علاقے میں کورونا کے مریضوں کی تعداد 148 ہوگئی ہے جب کہ علاقے میں اب تک وائرس سے ایک ہلاکت ہوئی ہے۔سرکاری پورٹل کے مطابق آزاد کشمیر میں کورونا سے اب تک 79 افراد صحت یاب ہوچکے ہیں۔پنجاب میں بدھ کو کورونا کے مزید 697 کیسز اور 7 ہلاکتیں بھی سامنے ا?ئیں جن کی تصدیق صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کی جانب سے کی گئی۔پی ڈی ایم اے پنجاب کے مطابق صوبے میں کورونا سے متاثر ہونے والے افراد کی مجموعی تعداد 17382 ہوگئی ہے جب کہ 297 افراد اب تک جاں بحق ہوچکے ہیں۔صوبے میں اب تک 5112 افراد صحت یاب بھی ہوچکے ہیں۔بلوچستان سے بدھ کو کورونا کے مزید 83 کیسز سامنے ا?ئے جس کے بعد صوبے میں کورونا سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 2968 ہوگئی ہے جب کہ 38 افراد اب تک جاں بحق ہوچکے ہیں۔بلوچستان میں کورونا سے متاثرہ 636 افراد صحت یاب بھی ہوچکے ہیں۔خیبر پختونخوا میں جمعرات کو کورونا وائرس سے مزید 14 افراد جان کی بازی ہار گئے جس کے بعد صوبے میں ہلاکتوں کی تعداد 365 ہوگئی ہے۔صوبائی محکمہ صحت کے مطابق صوبے میں کورونا کے مزید 340کیسز بھی سامنے آئے جس کے بعد متاثرہ افراد کی کل تعداد 6815 ہوچکی ہے۔کے پی میں 2198 افراد کورونا وائرس سے صحت یاب بھی ہو چکے ہیں۔بدھ کو گلگت بلتستان میں مزید 23 افراد میں مہلک وائرس کی تشخیص ہوئی جس کے بعد متاثرہ مریضوں کی تعداد 579 ہو گئی ہے

پاکستان ہلاکتیں

نیویارک(آن لائن)دنیا بھر میں کورونا وائرس سے متاثر ہونے والے افراد کی تعداد 50 لاکھ سے تجاوز کرگئی ہے، مختلف ممالک میں مہلک وائرس سے ہلاکتوں کی تعداد 3 لاکھ 30 ہزار تک پہنچ گئی ہے۔جمعرات کو امریکی ذرائع ابلاغ کے مطابق دنیا بھر سے ریکارڈ ایک لاکھ چھ ہزار نئے مریض رپورٹ کیے گئے ہیں۔ دنیا بھر میں اب تک 329,732 سے زیادہ افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔محتلف ملکوں میں اس وقت کورونا کے مریضوں کی تعداد 5,090,064 ہے جن میں سے 2,736,101 زیر علاج ہیں۔ کورونا وائرس اب بھی دنیا بھر میں تیزی سے پھیل رہا ہے۔ امریکہ، برطانیہ اور اٹلی کے بعد کورونا وائرس سے سب سے زیادہ اموات فرانس میں ہوئی ہیں۔امریکہ میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 15لاکھ 93 ہزار سے تجاوز کرگئی ہے، امریکہ میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا سے مزید1561 افراد لقمہ اجل بن گئے جبکہ ہلاکتوں کی مجموعی تعداد 95 ہزار ہوگئی ہے۔کورونا وائرس سے ہونے والی ہلاکتوں کے باعث امریکہ اب دنیا کا سب سے زیادہ متاثرہ ملک ہے، ملک میں وائرس کے مصدقہ کیسز کی تعداد 1593039تک پہنچ گئی ہے۔ امریکہ اس کے بعد سب سے زیادہ مریض روس، برازیل اور برطانیہ میں ہیں۔ادھر طبی ماہرین نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ جنوبی افریقہ میں سال رواں کے آخر تک کورونا وائرس سے 40 ہزار ہلاکتیں ہوسکتی ہیں۔ جنوبی افریقہ میں اب تک کورونا وائرس کے 18000 مصدقہ کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جبکہ وائرس کے باعث339 ہلاکتیں ہوئی ہیں۔دریں اثناء چین کے نیشنل ہیلتھ کمیشن کے مطابق گزشتہ روز کورونا وائرس کے دو نئے کیسز ریکارڈ کیے گئے۔ چین میں مہلک کورونا وائرس کے مجموعی کیسز کی تعداد 82967 ہے جبکہ اس سے 4634 ہلاکتیں ہوئی ہیں۔ عالمی ادارہ صحت کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران دنیا کے مختلف ممالک میں کورونا وائرس کے ریکارڈ 106000 نئے کیس درج کئے گئے ہیں۔ برازیل کورونا وائرس سے بری طرح متاثرہ ممالک کی فہرست میں دوسرے نمبر پر ہے اور ملک میں ایک دن میں 20 ہزار نئے مریضوں میں وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔انڈونیشیا میں ایک دن میں 700 نئے افراد میں وائرس کی تشخیص ہوئی ہے جس کے بعد یہ خدشات بڑھ گئے ہیں کہ ملک میں وبا ابھی تک اپنے عروج پر نہیں پہنچی ہے۔ عالمی ادارہ صحت کے مطابق دنیا بھر میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 50 لاکھ تک پہنچ گئی ہے جبکہ اس سے تین لاکھ سے زیادہ افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ امریکہ، برطانیہ اور اٹلی کے بعد کورونا وائرس کی وجہ سے سب سے زیادہ اموات فرانس میں ہوئی ہیں۔ ادھر بھارت میں کوروناوائرس کے ایک دن میں ریکارڈ 5609 کیس سامنے آنیکے بعد متاثرین کی تعداد 112359 تک پہنچ گئی ہے۔بھارت کورونا وائرس سے متاثر ہونے والا ایشیا کا تیسرا بڑا ملک بن گیا، بھارت میں کرونا وائرس کا انتہائی تیزی سے پھیلاؤ، ایک دن میں ریکارڈ 5611 کیسز، متاثرین کی مجموعی تعداد 106750 تک پہنچ گئی۔

عالمی ہلاکتیں

مزید :

صفحہ اول -