انکوائری کمیشن رپورٹ دھوکا:شہباز شریف،ہر الزام کو غلط،ثابت کرونگا:جہانگیر ترین

انکوائری کمیشن رپورٹ دھوکا:شہباز شریف،ہر الزام کو غلط،ثابت کرونگا:جہانگیر ...

  

لاہور (آئی این پی)پاکستان مسلم لیگ(ن) کے صدر اور قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے چینی بحران پر تحقیقاتی کمیشن کی رپورٹ کو ایک دھوکا قرار دے دیا اور کہاہے کہ کمیشن نے شوگر ایکسپورٹ کرنے کے اصل ذمہ دار عمران خان کا بیان ریکارڈ نہیں کیا جو اس اسکینڈل کا اصل ذمہ دار ہے، شوگر انکوائری رپورٹ میں میرے بچوں کا نام آیا ہے لیکن انہوں نے چینی ایکسپورٹ نہیں کی، سلمان شہباز پاکستان سے کیوں غائب ہیں، یہ سوال حکومت سے کیاجائے، اس نیب نیازی گٹھ جوڑ نے نیب کے انصاف کرنے کا بیڑا غرق کردیا ہے، جانتا ہوں وہ مجھے کیوں گرفتار کرنا چاہتے ہیں، نیب نیازی گٹھ جوڑ اگر گرفتار کرنا چاہتا ہے تو شوق سے کرے، اس وقت سب سے زیادہ زیر عتاب ہماری جماعت ہے، شہباز نے مسلم لیگ (ن) اور مسلم لیگ (ق)کے درمیان برف پگھلنے کی بھی نوید سنادی کہ ق لیگ سے سرد مہری میں بہت کمی آئی ہے۔ماضی کی دوری کو ختم کرنے کی شعوری کوشش کررہے ہیں، شہزاد اکبر اور عمران خان نے برطانوی اخبار میں میر ے خلاف جھوٹی اسٹوری لگوائی ہے۔ جمعرات کو نجی ٹی و ی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ انکوائری کمیشن کی رپورٹ محض ایک دھوکہ ہے کیونکہ کمیشن نے شوگر ایکسپورٹ کرنے کے اصل ذمہ دار عمران خان کا بیان ریکارڈ نہیں کیا جو اس اسکینڈل کا اصل ذمہ دار ہے۔میاں شہباز شریف کا یہ بھی کہنا تھا کہ شوگر انکوائری رپورٹ میں ان کے بچوں کا نام آیا ہے لیکن ان کے بچوں نے چینی ایکسپورٹ نہیں کی۔انہوں نے کہا کہ عمران خان کا چینی کمیشن بنانا الٹا خود چور کوتوال کو ڈانٹنا ہے۔لیگی صدر کا کہنا تھا کہ ایکسپورٹ کے لیے بنیادی اصول یہ ہے کہ ملک میں سرپلس ہو۔ جب انٹرنیشنل مارکیٹ دبا میں ہو تو حکومتیں اس خاص چیز پر سبسڈی دیتی ہیں۔ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ 19-2018 کے اعداد و شمار سے ثابت ہوجائے گا کہ کوئی ایکسپورٹیبل سرپلس نہیں تھا۔انہوں نے کہا کہ اس سال ہمارے پاس کوئی سرپلس نہیں تھا، اس لیے ایکسپورٹ کا سوال ہی نہیں پیدا ہوتا۔۔لیگی صدر نے کہا کہ قائد نواز شریف بطور وزیراعظم جے آئی ٹی میں پیش ہوسکتے ہیں تو ان کو کونسا سرخاب کا پر لگا تھا، کمیشن اتنا خوفزدہ تھا کہ وزیراعظم کو بلا نہ سکا۔شہباز شریف کا کہنا تھا کہ شاہد خاقان عباسی کمیشن میں پیش ہوئے، عمران خان کو تو خود پیش ہونا چاہیے تھا۔شہباز شریف نے کہا کہ سلمان شہباز میرا بیٹا ہے لیکن اس کے کاروبار سے میرا دور دور تک کوئی لینا دینا نہیں۔ میں نے اپنے اثاثے بہت پہلے بچوں کو ٹرانسفر کردیے تھے۔عمران خان کو ہدف تنقید بناتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ نیازی صاحب کو ویسے تو ہر بات کا پتا ہوتا ہے لیکن ایسے فیصلے کر گئے جس سے بیڑا غرق ہوا۔شہباز شریف کا کہنا تھا کہ میں جانتا ہوں وہ مجھے کیوں گرفتار کرنا چاہتے ہیں، نیب نیازی گٹھ جوڑ اگر گرفتار کرنا چاہتا ہے تو شوق سے کرے۔ اس وقت سب سے زیادہ زیر عتاب ہماری جماعت ہے۔لیگی صدر نے کہا کہ شہزاد اکبر اور عمران خان نے برطانوی اخبار میں جھوٹی اسٹوری لگوائی ہے۔۔انہوں نے مسلم لیگ (ن) اور مسلم لیگ (ق)کے درمیان برف پگھلنے کی بھی نوید سنادی۔ شہباز شریف کا کہنا تھا کہ ق لیگ سے سرد مہری میں بہت کمی آئی ہے۔ماضی کی دوری کو ختم کرنے کی شعوری کوشش کررہے ہیں۔سابق وزیراعظم اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سینئر نائب صدر شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ میڈیا پہ تماشہ لگا کر عمران خان کو این آر او دینے کی ناکام کوشش ہے۔ ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ میڈیا پہ سرکس میں اصل چینی چور وزیراعظم عمران خان اوربزدار کا ذکر تک نہیں،ایک اور جھوٹی پریس کانفرنس میں عمران خان کی چوری چھپانے کی تفصیل بیان کی گئی۔ ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ تمام فیصلوں کی منظوری دینے والے عمران خان، حفیظ شیخ، اسد عمر اور بزدار اصل چینی چور ہیں، انہیں گرفتا رکیاجائے،سچ یہ ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے چینی برآمد کی اس وقت اجازت دی جب ملک میں چینی کی قلت تھی۔

شہباز شریف

اسلام آباد(آئی این پی) تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر خان ترین نے کہا ہے کہ جھوٹے الزامات سے جھٹکا لگا ہے، اپنے خلاف لگنے والے ہر الزام کاجواب دوں گا اور اسے غلط ثابت کروں گا۔شوگر انکوائری کمیشن رپورٹ کے حوالے سے سوشل میڈیا پر اپنے ردعمل میں جہانگیر ترین کا کہنا تھا کہ 'میں نے ہمیشہ صاف ستھرا کاروبار کیا ہے اور پورا پاکستان جانتا ہے کہ گنے کے کاشت کاروں کوہمیشہ مکمل ادائیگی کی ہے۔ جہانگیر ترین کا کہنا ہے کہ انہوں نے کبھی دہرے کھاتے نہیں بنائے، ہمیشہ ذمہ داری سے ٹیکس اداکیے، اپنے خلاف لگنے والے ہر الزام کاجواب دوں گا اور اسے غلط ثابت کروں گا۔رہنما مسلم لیگ ق چودھری مونس الہیٰ نے شوگر انکوائری کمیشن کی رپورٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ہے کہ قانون سازی کیلئے سفارشات کی حمایت کرتا ہوں۔چودھری مونس الہیٰ نے اپنے ٹویٹ میں لکھا کہ میں پہلے ہی کہہ چکا ہوں کہ کسی شوگر مل کی مینجمنٹ میں شامل ہوں اور نہ ہی کسی مل کے بورڈ کا حصہ ہوں۔لیگی رہنما کا کہنا تھا کہ سٹہ بازی اور چینی کی قیمتوں میں ساز باز سے جوڑ توڑ روکنے کے لئے کمیشن کی سفارشات کی حمایت کرتا ہوں۔پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی)نے حکومت کی جانب سے جاری کردہ چینی بحران انکوائری رپورٹ کو گمراہ کن قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس میں کسی کو بچانے کی کوشش کی گئی ہے، آخری مرتبہ سندھ حکومت نے دسمبر 2017 میں شوگر ملز کو سبسڈی دی تھی، انکوائری کمیشن کو 2019 اور 2020 کے حوالے سے تحقیق کرنا تھی۔ جمعرات کو چینی بحران انکوائری رپورٹ آنے کے بعد نجی ٹی وی سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے سندھ حکومت کے ترجمان بیرسٹر مرتضی وہاب کا کہنا تھا کہ کمیشن کی جس رپورٹ کا شہزاد اکبر نے بتایا جھوٹ پر مبنی ہے۔انہوں نے کہا کہ آخری مرتبہ سندھ حکومت نے دسمبر 2017 میں شوگر ملز کو سبسڈی دی تھی۔مرتضی وہاب کا کہنا تھا کہ انکوائری کمیشن کو 2019 اور 2020 کے حوالے سے تحقیق کرنا تھی۔انہوں نے کہا کہ 2017 یا 18 سے متعلق تحقیقات تو ٹی او آرز میں نہیں تھی یہ شاید لوگوں کو بچانے کی کوشش ہے۔مرتضی وہاب کا کہنا تھا کہ اگر انکوائری کا مقصد سیاسی مخالفین کو پن پوائنٹ کرنا ہے تو ہمارا اعتراض ہے۔ان کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت کو وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ اور چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری فوبیا ہوچکا ہے۔مرتضی وہاب نے کہا کہ جان بوجھ کر انکوائری کا دائرہ کار بڑھایا جارہا ہے تاکہ ذمہ داروں کی نشاندہی نہ ہو۔ان کا کہنا تھا کہ چینی کی ایکسپورٹ کرنے کی اجازت سندھ حکومت نے نہیں بلکہ وفاقی حکومت نے دی تھی۔

جہانگیر ترین

مزید :

صفحہ اول -