عید اس دن منائیں گے جب صوبہ بنے گا، ظہوردھریجہ

عید اس دن منائیں گے جب صوبہ بنے گا، ظہوردھریجہ

  

ملتان (سٹی رپورٹر)حقیقی عید اُس وقت منائیں گے جب صوبہ بنے گا۔ وسیب کے نوجوان عید کی تیاری کریں۔ ان خیالات کا اظہار سرائیکستان قومی کونسل کے صدر ظہور دھریجہ نے سرائیکستان یوتھ کونسل دھریجہ نگر کے وفد سے ملاقات کے دوران کیا۔ وفد میں معین خان، عاطف دھریجہ، جام وسیم، اسد دھریجہ، مزمل دھریجہ، مجاہد دھریجہ، فرحان دھریجہ و دیگر موجود تھے۔ اس موقع پر نوجوانوں نے سرائیکی صوبے کیلئے جدوجہد کرنے کا عزم کیا۔ ظہور دھریجہ نے(بقیہ نمبر56صفحہ6پر)

کہا کہ عید سر پر آگئی ہے مگر ابھی تک مستحقین کو امداد نہیں ملی۔ صوبائی حکومت کی طرف سے فنکاروں سے درخواستیں مانگی گئی تھیں اور وزیر اعلیٰ پنجاب کی طرف سے اعلان کیا گیا تھا کہ عید سے پہلے فنکاروں کو امداد دے دیں گے۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ فوری طور پر امداد دی جائے۔ انہوں نے کہا کہ لیبر انتظامیہ کی جانب سے وسیب میں کام کرنے والے مزدوروں کو کورونا لاک ڈاؤن کے دوران امداد دینے کا اعلان ہوا مگر ابھی تک نہیں ملی حالانکہ عید سر پر آگئی ہے، سوال یہ ہے کہ غریب اور مزدور کس طرح عید کریں گے؟ انہوں نے کہا کہ کورونا کا عذاب غریب طبقات پر ظلم اور بے انصافی کے نتیجے میں آیا۔ حکمرانوں کو توبہ کرنی چاہئے اور حق داروں کو اُن کا حق دے دینا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ وسیب کے کروڑوں افراد کیلئے سرائیکی صوبہ زندگی و موت کا سوال ہے۔ رواں مالی سال میں مختص 3 ارب روپے سب سیکرٹریٹ کی بجائے صوبائی سیکرٹریٹ کیلئے خرچ کئے جائیں اور صوبے کا اعلان کیا جائے۔ جب تک صوبہ نہیں بنتا وسیب کے مسئلے حل نہیں ہوں گے۔ حقیقی عید اُس وقت ہو گی جب صوبہ سرائیکستان بنے گا۔ انہوں نے کہا کہ وسیب میں ٹڈی دل نے تباہی پھیلا دی ہے۔ ٹڈی دل کے خاتمے کیلئے اقدامات کئے جائیں۔ صدر کو نیشنل کمیشن بنانے کی بجائے صوبہ کمیشن بنانا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ وسیب کے تمام نوجوانوں کو عید کے موقع پر گھر گھر پہنچ کر سرائیکی صوبے کا پیغام عام کرنا چاہئے۔ عید کے بعد ادبی، ثقافتی اور سیاسی سرگرمیوں کا آغاز کر دینا چاہئے۔

ظہور دھریجہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -