وزیراعظم کی ترجیحات میں صحت اور تعلیم کے نظام کو بہتر بنانا شامل ہے: شوکت یوسفزئی

وزیراعظم کی ترجیحات میں صحت اور تعلیم کے نظام کو بہتر بنانا شامل ہے: شوکت ...

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبرپختونخوا کے وزیر محنت و ثقافت شوکت یوسفزئی نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی ترجیحات میں صحت اور تعلیم کے سسٹمز کو بہتر بنانا شامل ہے کیونکہ اس سے براہِ راست فائدہ غریب عوام کو ملتا ہے۔صحت کے شعبہ میں اقدامات لانا فلاحی ریاست کے قیام کے لیے وزیر اعظم عمران خان ایک مثبت پیشرفت ہے جس میں ڈاکٹر کمیونٹی کا کردار اہم ہے۔ ہیلتھ سسٹم کی بہتری کے لیے صوبائی حکومت نے ایمرجنسی صورتحال میں کام کیا۔ ہیلتھ سسٹم میں ریفارمز عوام اور صحت کے عملے کی بہتری کو مدنظر رکھ کر کی گئی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز ڈاکٹر مدیر کے ہمراہ آئے ہوئے خیبرپختونخوا انصاف ڈاکٹر فورم کے ایک وفد سے ملاقات میں کیا۔ وفد میں ڈاکٹر سجاد داوڑ، ڈاکٹر مشتاق، ڈاکٹر نبی جان آفریدی، ڈاکٹر امجد، ڈاکٹر رحمت مہمنداور ڈاکٹر طارق بابر شامل تھے۔ ملاقات میں انصاف ڈاکٹر فورم نے صوبائی حکومت کی صحت پالیسیوں سے مکمل اتفاق کرتے ہوئے کہا کہ انصاف ڈاکٹر فورم وزیر اعظم عمران خان کے ویژن کے مطابق ہیلتھ ریفارمز اور فلاحی ریاست کے قیام کے لیے اپنی بھر پور کوششیں کرینگے تاکہ عوام کو صحت کی بہترین سہولیات کی فراہمی ہر حال میں یقینی بنائی جا سکے اور غریب طبقے کے طرز زندگی کو بہتر بنایا جا سکے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ وزیر اعلیٰ محمود خان صوبے کے ہسپتالوں میں سہولیات کی فراہمی کو مانیٹر کرتے ہیں اور وہ چاہتے ہیں کہ صوبے کے ہسپتالوں کو شوکت خانم ہسپتال کی طرز پر ڈھالا جا سکے جہاں پر غریب عوام کو علاج میں کسی قسم کی رکاوٹ نہ ہو۔ موجودہ کورونا وائرس کی وجہ سے صوبے کے ہسپتالوں پر بوجھ بڑا ہے اور سہولیات بھی تھوڑی متاثر ہوئی اور مشکلات پیش آئی ہیں۔ کیونکہ کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے پوری دنیا میں کوئی بھی تیار نہیں تھا لیکن وزیراعلی محمود خان کی بہتر پالیسوں اور بروقت اقدامات سے ان تمام مشکلات پر قابو پالیا جائے گا۔ شوکت یوسفزئی نے وفد پر زور دیا کہ صحت ریفارمز اور بہتری کے لیے وہ اپنی تجاویز حکومت کے سامنے لائیں تاکہ ان پر بروقت عمل درآمد کیا جا سکے اور عوام کو زیادہ سے زیادہ علاج کی سہولیات فراہم کی جا سکیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -