گرمی لگنے پر روسی نرس حفاظتی شیٹ کے نیچے صرف انڈرویئر پہن کر مریضوں کو دیکھنے وارڈ میں آگئی، تصویر وائرل ہوئی تو اُسے ایسی پیشکش آگئی کہ زندگی بدل گئی

گرمی لگنے پر روسی نرس حفاظتی شیٹ کے نیچے صرف انڈرویئر پہن کر مریضوں کو دیکھنے ...
گرمی لگنے پر روسی نرس حفاظتی شیٹ کے نیچے صرف انڈرویئر پہن کر مریضوں کو دیکھنے وارڈ میں آگئی، تصویر وائرل ہوئی تو اُسے ایسی پیشکش آگئی کہ زندگی بدل گئی

  

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) روس کے ایک ہسپتال کے کرونا وائرس وارڈ میں ایک نرس ایسا شرمناک لباس پہن کر ڈیوٹی کرتی نظر آ گئی کہ تصویر انٹرنیٹ پر پوسٹ ہوئی تو ایک کہرام برپا ہو گیا ، لیکن ہسپتال انتظامیہ نے اس کے خلاف کارروائی کا اعلان کیا تو ملک کے سیاستدان اور دیگر طاقتور حلقے نرس کے دفاع میں آگے آ گئے۔ میل آن لائن کے مطابق نادیہ نامی 23سالہ نرس نے تولا ریجنل کلینکل ہاسپٹل کے کورونا وائرس وارڈ میں ڈیوٹی کر رہی تھی۔ وہاں سے اس کی جو تصویر انٹرنیٹ پر وائرل ہوئی اس میں اس نے حفاظتی لباس کے نیچے صرف زیرجامہ پہن رکھا ہوتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق کورونا وائرس سے بچاﺅ کا حفاظتی لباس اس قدر باریک تھا کہ اس کے نیچے نرس کا جسم اور زیرجامہ واضح نظر آ رہے تھے، مگر وہ اس فحش لباس کے ساتھ پورے انہماک سے اپنا کام کر رہی ہوتی ہے۔ اس کی تصویر وائرل ہونے کے بعد ہسپتال انتظامیہ نے اس کے خلاف کارروائی کا اعلان کیا تو اس کے ساتھی ڈاکٹر اور پیرامیڈکس کے علاوہ سیاستدان اس کے دفاع میں آگے آ گئے۔ ان لوگوں کا کہنا تھا کہ ”حفاظتی لباس کے نیچے پہننے کے لیے محفوظ لباس کی بہت قلت ہے جس کی وجہ سے نادیہ نے صرف زیرجامہ پہن کر ڈیوٹی کی۔ ہمیں اس کا مشکور ہونا چاہیے، نہ کہ اس کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے۔ رپورٹ کے مطابق اس تصویر کے وائرل ہونے کی وجہ سے نادیہ کو ماڈلنگ کی آفرز بھی آنے لگی ہیں۔ ’مس ایکس لنگری‘ برانڈ کی سربراہ انستاسیا یاکوشیوا نے کہا ہے کہ ”میں چاہتی ہوں کہ تولا ہسپتال کی نرس نادیہ ہمارے انڈرویئر کی ماڈلنگ کرے۔ ہم اسے زیرجاموں کے کئی سیٹ بھیج رہے ہیں اور مستقبل میں ہم اس کے ساتھ سالانہ معاہدہ کرنے کا پلان رکھتے ہیں۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -