کورونا وائرس سے لاکھوں کاروبار تباہ لیکن وہ ایک شرمناک کاروبار جس کو چار چاند لگ گئے، گاہکوں میں کئی گنا اضافہ

کورونا وائرس سے لاکھوں کاروبار تباہ لیکن وہ ایک شرمناک کاروبار جس کو چار ...
کورونا وائرس سے لاکھوں کاروبار تباہ لیکن وہ ایک شرمناک کاروبار جس کو چار چاند لگ گئے، گاہکوں میں کئی گنا اضافہ

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس اور لاک ڈاﺅن کی وجہ سے جہاں بیشتر کاروبار تباہ ہو رہے ہیں وہیں آپ کو یہ سن کر شدید حیرت ہو گی کہ جنسی گڑیاﺅں کا شرمناک کاروبار تیزی سے بڑھ رہا ہے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق جنسی گڑیائیں بنانے والی کمپنی ’جینی‘ کی بانی خاتون جینیٹ سٹیوسن کا کہنا ہے کہ لاک ڈاﺅن کے دوران توقع کے برعکس انہیں سینکڑوں نئے آرڈرز موصول ہو رہے ہیں۔ نئے آرڈرز اتنی زیادہ تعداد میں آ رہے ہیں کہ انہیں پورا کرنا کمپنی کے لیے مشکل ہو رہا ہے۔

جینیٹ سٹیوسن کا کہنا تھا کہ ”ہماری ہیلپ لائن پر لوگ پہلے بھی جنسی گڑیاﺅں کے متعلق معلومات حاصل کرتے تھے لیکن لاک ڈاﺅن کی وجہ سے ان لوگوں کی تعداد میں بھی کئی گنا اضافہ ہو گیا ہے اور اب پہلے سے کہیں زیادہ لوگ جنسی گڑیاﺅں کے متعلق معلومات حاصل کر رہے ہیں۔کورونا وائرس اور لاک ڈاﺅن کے دوران ہمارا کام اتنا بڑھ گیا ہے کہ ہم نیا سٹاف بھرتی کرنے پر غور کر رہے ہیں تاکہ اپنے گاہکوں کی ڈیمانڈ پر پورا اتر سکیں۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -