پاکستان کی پانی ذخیرہ کرنیکی گنجائش 33 دن کیلئے ہے، شیری رحمان

   پاکستان کی پانی ذخیرہ کرنیکی گنجائش 33 دن کیلئے ہے، شیری رحمان

  

اسلام آباد (آن لائن) پاکستان پیپلز پارٹی کی نائب صدرسینیٹر شیری رحمان نے اپنے ٹویٹر پیغام میں کہا ہے کہ پاکستان کی پانی ذخیرہ کرنے کی گنجائش اب صرف 33 دن کیلئے ہے،شمالی علاقوں سے پانی کی آمد میں 22 فیصد کمی واقع ہوئی ہے، شیری رحمان نے کہا کہ ندیوں کے بہاؤ کا 41 فیصد انحصار گلیشیئر پگھلنے پر ہے،ہندوکش کی رپورٹ میں متنبہ کیا گیا ہے کہ 2100 تک 33 فیصد گلیشیر پگھل جائیں گے،پاکستان کی سالانہ فی کس پانی کی دستیابی 5060 مکعب میٹر سے کم ہو کر اب صرف 908 مکعب میٹر رہ گئی ہے،انہوں نے کہا کہ آج فوری اقدام نہ اٹھائے گئے تو 2025 تک پاکستان سوکھ جائے گا،صاف پانی تک رسائی انسانی بنیادی حق ہے،پاکستان اپنے تازہ پانی کے 80 فیصد وسائل کو فصلوں پر خرچ کرتا ہے،ماحول دوست اور پائیدار زراعت کے طریقے کار اپنانے سے ہم 50 فیصد پانی کے استعمال کو کم کر سکتے ہیں،قومی یکجہتی کے بغیر آبی مسائل کو دور نہیں کرسکتے ہیں پانی کا تحفظ گھر سے شروع ہوتا ہے،ہماری ذمہ داری ہے کہ وہ پانی کو دانشمندی سے استعمال کریں،صرف برش کرتے وقت نل بند کرکے ہم ماہانہ 8 گیلن پانی بچاسکتے ہیں۔

شیری رحمان

مزید :

پشاورصفحہ آخر -