متحدہ علماء محاذ کے تحت یوم یکجہتی فلسطین جوش و جذبے سے منایاگیا

متحدہ علماء محاذ کے تحت یوم یکجہتی فلسطین جوش و جذبے سے منایاگیا

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)متحدہ علماء محاذ پاکستان نے حکومت کی اپیل پر بیت المقدس اور فلسطینیوں پر اسرائیلی جارحیت کے خلاف یوم یکجہتی فلسطین جوش و جذبے و دینی حمیت کے ساتھ منایااس موقع پر محاذ میں شامل مختلف مکاتب فکر کے 300سے زائد علماء مشائخ و ذاکرین نے خطبات جمعہ میں قبلہ اول بیت المقدس اور نہتے مظلوم فلسطینیوں پر اسرائیلی جارحیت کے خلاف مذمتی قراردادیں منظور کرائیں اور اقوام متحدہ کے جانب دارانہ کردار کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اقوام متحدہ دنیا میں عدل و انصاف و امن قائم کرنے میں بری طرح ناکام اور اپنی افادیت کھوچکاہے۔علماء نے کہا کہ تمام مذہبی،سیاسی،سماجی اور فلاح و بہبود کے ادارے فلسطین فنڈ قائم کریں اور قیامت کی اس گھڑی میں اپنے مظلوم فلسطینی بھائیوں کی ہر سطح پر مدد کریں۔بیت المقدس پر اسرائیلی جارحیت کے خلاف علماء و عوام حکومت کے ساتھ ہیں،اسرائیل کے خلاف جہاد فرض ہوچکا،حکومت جہاد کا اعلان کرے، مظلوم فلسطینیوں کی جلد بحالی آبادکاری وخوشحالی کیلئے فوری اقدامات کئے جائیں۔ دریں اثناء مساجد کے باہر اسرائیل کے خلاف اور فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کے لئے مختصر ریلیاں نکالی گئیں۔اسرائیلی، امریکی و بھارتی پرچم نذرآتش کئے گئے۔اجتماعات سے خطیب پاکستان مولانا تنویر الحق تھانوی، مولانا محمد امین انصاری، علامہ مرزایوسف حسین، مولانا انتظارالحق تھانوی،پروفیسر حافظ محمد سلفی، علامہ عبدالخالق فریدی،علامہ قاضی احمد نورانی صدیقی، علامہ علی کرارنقوی، علامہ سید سجاد شبیررضوی، مفتی وجیہہ الدین، علامہ روشن دین الرشیدی، علامہ شاہدین اشرفی ودیگر نے خطاب کیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -