لوگوں سے مسلسل رابطہ رکھیں، ان میں سے کوئی نہ کوئی اہل شخص آپ کو مل جائے گا

لوگوں سے مسلسل رابطہ رکھیں، ان میں سے کوئی نہ کوئی اہل شخص آپ کو مل جائے گا
لوگوں سے مسلسل رابطہ رکھیں، ان میں سے کوئی نہ کوئی اہل شخص آپ کو مل جائے گا

  

مصنف:ڈاکٹر ڈیوڈ جوزف شیوارڈز

قسط:75

اس بات کو یاد رکھیے! کسی شخص کو اعلیٰ عہدے کیلئے منتخب نہیں کیا جاتا جب تک وہ اپنے آپ کو اس قابل نہ بنا لے۔

ہم ان لوگوں کے سبب اعلیٰ معیار تک پہنچتے ہیں جو ہمیں اس اعلیٰ معیار کے قابل سمجھتے ہیں۔ ہر دوست آپ کو اعلیٰ معیار تک پہنچنے میں مدد دیتا ہے۔کامیاب لوگ دوسرے لوگوں سے تعلق جوڑنے کی منصوبہ بندی کر کے اس کے مطابق عمل کرتے ہیں۔ کیا آپ ایسا کرتے ہیں؟ کچھ لوگ کامیاب ہو کر اعلیٰ عہدوں پر پہنچ کر دوسروں سے متعلق نہیں سوچتے لیکن آپ حیران ہوں گے بہت سے بڑے لوگ دوسروں سے اپنے تعلق کو بہت ہی واضح طور پر بیان کرتے ہیں، بلکہ کچھ تو باقاعدہ اپنے پروگرام کو لکھ کر رکھتے ہیں کہ عام لوگوں سے اپنے تعلق کو مضبوط کیسے بنایا جائے؟

ایک امریکی صدر لنڈن بی جانس جو بہت پہلے امریکہ کا صدر بنا تھا، اس نے باقاعدہ لکھ کر پروگرام ترتیب دیا تھا کہ وہ دوسرے لوگوں سے اپنے رابطوں کو مضبوط بنا سکے۔ اس نے اس مقصد کیلئے کچھ ضابطے بنائے تھے جوکہ یہ تھے:

-1دوسرے لوگوں کے نام یاد رکھیے، اگر آپ دوسرے کے نام یاد رکھنے کی اہلیت نہیں رکھتے تو اس کا مطلب ہے کہ آپ دوسرے لوگوں میں بالکل دلچسپی نہیں رکھتے۔

-2پرسکون رہ کر دوسروں کیلئے سہولت پیدا کریں، دوسروں کی انفرادی پہچان رکھیے۔

-3پرسکون رہنے کی اہلیت پیدا کریں، آپ پریشان بالکل نظر نہ آئیں۔

-4خودپرست مت بنیں اپنے تاثر کو اچھا بنائیں۔

-5اپنے اندر ایسی اہلیت پیدا کریں کہ آپ سے تعلق رکھنے والے آپ سے فائدہ حاصل کر سکیں۔

-6اپنی شخصیت سے تکلیف دینے والے عناصر کو نکال دیجیے، ایسے عناصر بھی جو لاشعوری طو رپر آپ کی شخصیت میں ہیں انہیں بھی نکال دیں۔

-7اگرکسی کے ساتھ کوئی غلط فہمی ہو تو اس کو ختم کر کے اس کا ازالہ کر لیجیے اور اپنے غصے کو ختم کر دیں۔

-8لوگوں سے مسلسل رابطہ رکھیں، ان میں سے کوئی نہ کوئی اہل شخص آپ کو مل جائے گا۔

-9خوشی کے موقع پر لوگوں کو مبارکباد دینا نہ بھولیئے اگر ان کو کوئی غم تکلیف ہو تو ان سے ہمدردی ضرور کیجیے۔

-10لوگوں کو روحانی طاقت دیجیے، وہ بھی آپ سے شفقت سے پیش آئیں گے۔

لوگوں کو رابطے میں رکھنے کیلئے ان سادہ مگر طاقتور اصولوں کو اپنائیں۔ ان ہی اصولوں نے صدر جانسن کو ووٹ حاصل کرنے میں آسانی پیدا کی تھی، اور ان ہی اصولوں کی بنا پر اسے کانگرس میں حمایت حاصل ہوئی تھی۔

ان اصولوں کو دوبارہ پڑھیں ان میں کوئی خاص فلسفہ نہیں ہے صرف سادہ سے اصول ہیں، ان میں صرف اس بات کو ظاہر کیا گیا ہے کہ ہمیں لوگوں سے مفاہمت رکھنی چاہیے۔ ہم جانتے ہیں کہ دوسرے لوگ بے وقوف نہیں ہیں۔صنعت وحرفت میں بھی لوگ اعلیٰ عہدوں پر ہیں، آرٹ، سائنس اور سیاست میں بھی ہیں۔ ان میں اکثر لوگ عوام کے پسندیدہ لوگ ہوتے ہیں۔”دوستی خریدنے کی کوشش نہ کریں یہ برائے فروخت نہیں ہے۔“( جاری ہے ) 

نوٹ : یہ کتاب ” بُک ہوم “ نے شائع کی ہے ( جُملہ حقوق محفوظ ہیں )۔

مزید :

ادب وثقافت -