تحریک انصاف اور حکومت مذاکرات کا راستہ اختیار کریں ، پاکستان علماء کونسل

تحریک انصاف اور حکومت مذاکرات کا راستہ اختیار کریں ، پاکستان علماء کونسل
 تحریک انصاف اور حکومت مذاکرات کا راستہ اختیار کریں ، پاکستان علماء کونسل

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان علماء کونسل نے کہا ہے کہ ملک میں انتشار ، فتنہ ، فساد کے خاتمے کیلئے محراب و منبر اپنا بھرپور کردار ادا کر ے گا، جمعۃ المبارک کو خطبات جمعہ اخوت ، محبت اور رواداری کے فروغ پر ہوں گے، ملک بھر میں استحکام پاکستان علماء و مشائخ کنونشنز منعقد کیے جائیں گے ، پاکستان علماء کونسل کااعلیٰ سطحی وفد تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں کے قائدین سے ملاقات کر کے ملک میں رواداری اور عدم تشدد کے فروغ کیلئے کردار ادا کرنے کی اپیل کرے گا۔ وزیر اعظم تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں کی آل پارٹیز کانفرنس بلائیں ، تحریک انصاف اور حکومت مذاکرات کا راستہ اختیار کریں ، مذاکراتی عمل صف اول نہیں تو صف دوم کی قیادت سے شروع کر لیے جائیں ۔ مسجد نبوی ﷺ کے واقعہ کے بعد حجاج کرام و زائرین کیلئے تربیتی عمل بہت ضروری ہے ، ملک بھر میں پاکستان علماء کونسل اور انٹرنیشنل تعظیم حرمین شریفین کونسل کے تعاون سے حجاج کیلئے تربیتی نشستیں منعقد کرے گی ، یہ بات پاکستان علماء کونسل کی مرکزی مجلس شوریٰ و عاملہ کے اجلاس کے بعد چیئرمین پاکستان علماء کونسل حافظ محمد طاہر محمود اشرفی اور دیگر قائدین مولانا عبد الحق مجاہد، مولانا محمد رفیق جامی ، مولانا اسعد زکریا قاسمی، مولانا نعمان حاشر، مولانا محمد شفیع قاسمی ، مولانا اسد اللہ فاروق ، مولانا قاضی مطیع اللہ سعیدی، علامہ طاہر الحسن ، مولانا عبید اللہ گورمانی ، علامہ زبیر عابد، مولانا محمد اشفاق پتافی ، مولانا اسعد حبیب شاہ جمالی ، مولانا بو بکر حمید صابری، مولانا طاہر عقیل اعوان، مولانا محمد اسلم صدیقی ، مولانا عزیز اکبر قاسمی ، مولانا سعد اللہ شفیق، مولانا حق نواز خالد، مولانا مفتی عبد الستار، مفتی عمر فاروق، مولانا زبیر کھٹانہ ، مولانا احسان احمد حسینی ، قاری عصمت اللہ معاویہ ، مولانا احمد مکی ، مولانا صاحبزادہ حافظ محمد ثاقب منیر، مولانا ذوالفقار، قاری عبد الحکیم اطہر، مولانا محمد اسلم قادری، مولانا عبد القیوم فاروقی ، قاری شمس الحق نواز، قاری مبشر رحیمی ، مولانا عبد الغفار فاروقی ، مولانا محمد ابراہیم حنفی اور دیگر قائدین نےکہی۔

 پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے رہنماؤں نے کہا کہ پاکستان میں سیاسی و مذہبی قیادت کا تلخ رویہ ملک میں انتشار و فتنہ کا سبب بن سکتا ہے لہذا سیاسی و مذہبی قائدین رواداری کے فروغ اور عدم برداشت کے خاتمے کیلئے کردار ادا کریں ، ملک کے موجودہ مسائل کا حل صاف شفاف انتخابات اور غیر جانبدارانہ احتساب ہے ، صاف و شفاف انتخابات کیلئے فوری طور پر انتخابی اصلاحات کی جائیں۔

رہنماؤں نے کہا کہ پاکستان علماء کونسل پاکستان کی حلیف ہے ، ہم ریاست پاکستان کے ساتھ ہیں پاکستان کیلئے تحریک انصاف کی حکومت سے تعاون کیا اور موجودہ حکومت سے بھی تعاون کریں گے ، قرآن و سنت کے احکامات کے مطابق اچھے امور میں تعاون اور غیر شرعی امور میں محاسب کا کردار ادا کریں گے ۔ رہنمائوں نے افواج پاکستان ملک کے سلامتی کے اداروں اور سپہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ کے خلاف چلائی جانے والی مہم کی بھرپور مذمت کرتے ہوئے کہا کہ مفاد پرست عناصر پاک فوج اور ملک کے سلامتی کے اداروں کو نشانہ بنا رہے ہیں، قوم اور افواج کو تقسیم کرنے کی سازش ہر صورت ناکام ہو گی، پاکستانی قوم اپنی افواج کی پشت پر کھڑی ہے ، نام نہاد دانشور اور مفکر کل تک فوج کے سیاست میں مداخلت کے خلاف مہم چلاتے تھے آج فوج سے سیاست میں مداخلت کی اپیلیں کر رہے ہیں۔ رہنمائوں نے مسجد نبوی ﷺ کے تقدس کے خلاف ہونے والے واقعہ کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اس سے پاکستان کا وقار اور عزت مجروح ہوئی ہے ۔

اجلاس میں ایک قرارداد کے ذریعے اسرائیلی افواج کی طرف سے فلسطینی صحافی کے قتل کی بھرپور مذمت کرتے ہوئے کہا گیا کہ اسرائیلی جارحیت کے خلاف دنیا کے ہر امن پسند کو آواز بلند کرنی چاہیے ۔ اجلاس میں ایک اور قرارداد کے ذریعے سعودی عرب کی حکومت کی طرف سے حج کیلئے بہترین انتظامات شروع کرنے اور 10 لاکھ حاجیوں کیلئے اہتمام پر خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبد العزیز اور ولی عہد امیر محمد بن سلمان کی خدمات کو سراہا گیا۔

صحافیوں کے سوالات کے جواب دیتے ہوئے حافظ محمد طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ سعودی عرب سمیت کوئی دوست ملک بھی پاکستان کو مایوس نہیں کرے گا ، پاکستان کے دوست ممالک پاکستان کے ساتھ کھڑے ہیں ، دوست ممالک کی دوست شخصیات کے ساتھ ہیں ، عوام اور ملک کے ساتھ ہیں لیکن ہمیں بھی اپنے ملک میں انویسٹمنٹ کے مواقع پیدا کرنے چاہئیں ، ہر وقت مانگنا بھی اچھی بات نہیں ہے ، سیاسی قائدین سے گزارش ہے کہ وہ دوست ممالک کے حوالے سے تبصروں سے گریز کریں۔

مزید :

قومی -علاقائی -پنجاب -لاہور -