اللہ ہی جانے پلس یا مائنس کون ہوگا،بیگناہوں کی گرفتاریوں سے اداروں کی ساکھ متاثر ہوگی:شیخ رشید

  اللہ ہی جانے پلس یا مائنس کون ہوگا،بیگناہوں کی گرفتاریوں سے اداروں کی ساکھ ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


        راولپنڈی(مانیٹرنگ ڈیسک)عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ آڈیو لیک تحقیقاتی کمیشن چیف جسٹس کے مشورے کے بغیر کیوں نہ بنالیں، آئینی و قانونی فیصلہ چیف جسٹس کی طرف سے آکر رہے گا اور عدلیہ جیتے گی۔سابق وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے ٹویٹ میں کہا کہ اللہ کو معلوم ہے کہ مائنس کون ہونے جارہا ہے اور پلس کون ہوگا لیکن اب یہ ہو کر رہے گا اور فیصلہ اسی ہفتے ہوجائے یا جون میں ۔شیخ رشید کا کہنا تھا کہ ساری قوم جناح ہاو¿س اور جی ایچ کیو پر حملے کی نہ صرف مذمت کرتی ہے بلکہ اس پر رنجیدہ ہے لیکن بے گناہ لوگوں کی گرفتاریوں سے اداروں کی ساکھ کو نقصان پہنچے گا، موجودہ حکومت لوگوں کی نظر میں قابل نفرت ہو چکی ہے جو بھی ان کا ساتھ دے گا ڈوب جائے گا۔ان کا کہنا تھا کہ جوپارٹیاں بدل رہے ہیں عوام میں ا±ن کی حیثیت د±لہن اک رات کی سے زیادہ نہیں ہے، دو تین ماہ سسرال جیل کاٹنے سے قیامت نہیں آجاتی لیکن بکنے کا دھبہ کبھی نہیں مٹتا،معاشی حالات خوف ناک ہوگئے ہیں، اسمبلی میں جانے اور نہ جانے سے فرق نہیں پڑتا۔
شیخ رشید

مزید :

صفحہ اول -