رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی، بینکاری شعبے کی کارکردگی متاثر کن

رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی، بینکاری شعبے کی کارکردگی متاثر کن

لاہور( کامرس رپورٹر )سٹیٹ بینک آف پاکستان کی جاری کردہ رپورٹ کے مطابق رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی میں بینکاری شعبے کی کارکردگی متاثر کن رہی ہے۔رپورٹ کے مطابق دو ہزار چودہ کی جولائی تا ستمبر سہ ماہی میں بینکاری شعبے میں خاصی بہتری آئی۔ آخر ستمبر دو ہزار چودہ تک منافع تاریخی طور پر بلند ترین سطح ایک سو چہتر ارب روپے تک پہنچ گیا جس میں آخر ستمبر دو ہزار تیرہ کے مقابلے میں چوالیس فیصد اضافہ ظاہر ہورہا ہے۔ اسی طرح اثاثوں اور ایکویٹی پر منافع بھی بہتر ہو کر بالترتیب ایک اعشاریہ چار فیصد اور پندرہ اعشاریہ نو فیصد ہوگیا جو ایک سال قبل ایک اعشاریہ ایک فیصد اور بارہ اعشاریہ تین فیصد تھے۔سٹیٹ بینک کے مطابق حوصلہ افزا امر یہ ہے کہ دباو¿ کی جانچ کے نتائج سے بھی ظاہر ہوتا ہے کہ نظام کی اساس سرمایہ اتنی مضبوط ہے کہ وہ قرضے، مارکیٹ اور سیالیت کے خطرے کی وجہ سے کوئی بھی غیر معمولی دھچکے برداشت کرسکتا ہے۔

ستمبر دو ہزار چودہ میں غیر فعال قرضوں اور کل قرضوں کا تناسب تموین منہا کرکے تین اعشاریہ دو فیصد ہے جو ستمبر دو ہزار گیارہ کے نقطہ عروج چھ اعشاریہ چار فیصد سے خاصا کم ہے۔

مزید : کامرس