16سالہ لڑکی پولیس کی جانب سے ہراساں کئے جانے پر عدالت پہنچ گئی

16سالہ لڑکی پولیس کی جانب سے ہراساں کئے جانے پر عدالت پہنچ گئی

لاہور(نامہ نگار)گھر والوں نے 50سالہ شخص سے شادی کر دی،بوڑھے کے ساتھ نہیں رہنا چاہتی ،16سالہ لڑکی پولیس کی جانب سے ہراساں کئے جانے پر انصاف کے لئے سیشن عدالت پہنچ گئی ۔ایڈیشنل سیشن جج نے پولیس کو اسے بلاوجہ حراساں نہ کرنے کا حکم دیتے ہوئے درخواست نمٹا دی ۔عدالت میں باغبانپورہ کی رہائشی مہک بی بی نے دائر درخواست میں موقف اختیار کیا ہے کہ سائلہ کے گھر والوں نے اس کی شادی اس کی مرضی کے بغیر پچاس سالہ بوڑھے شخص فریاد سے کر دی جس پر سائلہ گھر چھوڑ کر اپنے کزن کے گھر آگئی جس پراس کے والدین اور اس کاشوہر پولیس کی مدد سے اسے ہراساں کر رہے ہیں لہذاعدالت سے استدعا ہے کہ سائلہ کو تحفظ فراہم کیا جائے جس پر عدالت نے پولیس کو درخواست گزار اور اس کے کزن کو بلاوجہ ہراساں نہ کرنے کا حکم دے دیا ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4