جماعت اسلامی کا سودی نظام کیخلاف اعلان ،جنگ انتخابات متناسب نمائندگی کی بنیاد پر کرانیکا مطالبہ

جماعت اسلامی کا سودی نظام کیخلاف اعلان ،جنگ انتخابات متناسب نمائندگی کی ...

                                              لاہور (جنرل رپورٹر+سٹاف رپورٹر)امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے اپنے عوامی ایجنڈے کااعلان کرتے ہوئے سودی نظام کے خلاف اعلان جنگ ، انگریزوں کی دی ہوئی جاگیرواپس لینے اور آئندہ انتخابات متناسب نمائندگی کی بنیاد پر کرانے کا مطالبہ کیاہے ۔عوام الیکشن کے نام سلیکشن قبول نہیں کریں گے الیکشن کمیشن کی تشکیل نو ہونی چاہیے ۔سیاست ابوجہل کا کا م نہیں ،سیاست اللہ والوں کا کام ہے جن لوگوں نے سیاست کو بدنام کیا انہیں سمجھانے کی ضرورت ہے اگر وہ نہیں سمجھتے توانہیں گھر بٹھانے کی ضرورت ہے ۔ہم ابلیسی سیاست سے پناہ مانگے ہیں جماعت اسلامی میں کو ئی بھی فرد احتساب سے بالاتر نہیں ۔ایک مزدور کا بیٹا جماعت اسلامی کا امیر بن سکتا ہے ۔جماعت اسلامی لوگوں کو ایک پارٹی یا لیڈر کی نہیں بلکہ اللہ کی طرف بلاتی ہے ۔پاکستان میں آئین کا مسلہ نہیں ہے صرف قیادت کا مسلہ ہے ۔میں ایسے دستور کو نہیں مانتا جو چوروں اور لٹیروں کو نہیں پکڑتا۔ پاکستان کا آئین اسلامی خلافت کو تسلیم کرتا ہے ،ہم آئین پاکستان کا نفاذ چاہتے ہیں پاکستان کا آئین ختم نہیں ہونے دیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روزمینار پاکستان کے سائے میں جماعت اسلامی کے تین روزہ کل پاکستان اجتماع عام سے افتتاحی خطاب کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر جماعت اسلامی کے بیرون ملک امراءدیگر مذہبی جماعتوں و تنظیموں کے عہدیداران سمیت غیر ملکی مندوبین ،جماعت اسلامی کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ اور جماعت اسلامی کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل فرید احمد پراچہ اورروزنامہ پاکستان کے چیف ایڈیٹر مجیب الرحمن شامی سمیت دیگر قائد ین بھی موجود تھے ۔اجتماع عام سے خطاب کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے کہاکہ جماعت اسلامی اقتدار میں آ کر عام آدمی کو وی آئی پی اور وی آئی پیز کو عام آدمی بنائے گی ۔ انہوں نے امیر جماعت اسلامی اور خیبر پختونخوا کے سابق وزیر خزانہ کی حیثیت سے اپنے آپ کو احتساب کے لیے پیش کیا اور کہاکہ وزیراعظم نوازشریف اور سابقہ وزائے اعظم بھی اپنے آپ کو احتساب کے لیے پیش کریں۔ انہوں نے کہاکہ اسلامی اور خوشحال پاکستان کے تحت ہماری حکومت قائم ہوئی تو بے روزگاروں کو روزگار دیں گے اور جب تک حکومت روزگار نہ دے سکی انہیں بے روزگاری الاﺅنس دے گی ۔ مزدور کو کارخانوں کے منافع میں اور کسان اور ہاری کو زمین کی پیداوار میں حصہ دار بنائیں گے ۔ تیس ہزار سے کم آمدنی والے شہریوں کو چاول ، آٹا چینی اور دالوں پر حکومت سب سڈی دے گی۔ تعلیم عام اور مفت کرکے یکساں نظام تعلیم نافذ کریں گے ۔انہوں نے کہاکہ اسلامی حکومت دل، گردہ، کینسر اور یرقان سمیت پانچ بیماریوں کا مفت علاج کرے گی ، اسلامی حکومت بزرگوں کو اولڈ ایج سوشل الاﺅنس دے گی اور آئمہ مساجد کو سرکاری خزانے سے تنخواہیں دے گی ۔سراج الحق نے غیر مسلم پاکستانی برادری کو جان و مال کے تحفظ کی ضمانت دیتے ہوئے کہاکہ اسلامی حکومت میں ہی ان کے استحصال کا خاتمہ ممکن ہے ۔ انہوں نے کوٹ رادھا کشن میںمسیحی میاں بیوی کو زندہ جلانے کے واقعہ کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہاکہ ملک میں اسلامی قانون ہوتا تو اس طرح کا المناک واقعہ پیش نہ آتا ۔انہوں نے حکومت سے اپیل کی کہ وہ سودی نظام کے حق میں اپنی اپیل واپس لے لے ورنہ عوام سے سودی اداروں کے بائیکاٹ کی اپیل کی جائے گی۔سراج الحق نے کہاکہ عوام الیکشن کے نام پر سلیکشن قبو ل نہیں کریں گے اب بیلٹ بکس پر اعتماد کو بحال کرناہوگا ۔ ملک میں ظاہر ی اور باطنی دو طرح کی حکومتیں قائم ہیں بیرونی دنیا پریشان ہے کہ ظاہری حکومت سے معاہدے کریں یا باطنی سے ۔ اب ظاہر اور باطن کو ایک کرناہوگا ۔ انہوں نے کہاکہ ملک میں موجود کرپشن کا سومنات ہمارے سوا کوئی نہیں توڑ سکتاہمارے سینکڑوں کارکنان قومی و صوبائی اسمبلیوں اور سینیٹ کے ممبران رہے لیکن کسی کے دامن پر کرپشن کا کوئی داغ نہیں ۔ سراج الحق نے کہاکہ اسلامی جمہوری اور فلاحی پاکستان کا راستہ کوئی نہیں روک سکتا ۔مجبور و محروم لوگ متحد ہوکر کرپٹ اشرافیہ کی جائنٹ فیملی کا مقابلہ کر سکتے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ جماعت اسلامی ابلیسی سیاست سے پناہ مانگتی ہے ، ہم دلوں کی دنیا تبدیل کر کے رحمانی اور محمدی سیاست کو فروغ دیں گے ۔چند سو لوگوں نے پارلیمنٹ اور بیوروکریسی پر قبضہ کر رکھاہے اسلامی نظام کی دشمن قوتیں صرف اپنے” سٹیٹس کو “ کو بچانے کے لیے اسلام کی مخالفت کر رہی ہیں ۔انہو ں نے کہاکہ ہم لوگوں کو پارٹی یا پارٹی لیڈر کی طرف نہیں بلکہ اللہ کی طرف بلاتے ہیں اور اللہ کی حاکمیت اور آئین کی حکمرانی چاہتے ہیں ،جولوگ اسلامی نظام کی مخالفت کررہے ہیں وہ آئین پاکستان سے بغاوت کررہے ہیں۔سراج الحق کے خطاب کے بعد کل پاکستان اجتماع ارکان ، خواتین کانفرنس اور نوجوانوں کا یوتھ کنونشن رات گئے تک جاری رہا۔اجتماع عام سے ناظم اجتماع میاں مقصود احمد اور سکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے بھی خطاب کیا۔

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...